Sunday , April 23 2017
Home / شہر کی خبریں / گرمائی تعطیلات میں اساتذہ کی خدمات پر سخت کارروائی

گرمائی تعطیلات میں اساتذہ کی خدمات پر سخت کارروائی

عوامی شکایت پر محکمہ تعلیمات کا فیصلہ ، شہر اور اضلاع کے اسکولس پر گہری نظر
حیدرآباد۔14اپریل(سیاست نیوز) اسکولوں کو دی جانے والی گرمائی تعطیلات کے دوران اساتذہ اور غیر تدریسی عملہ کو اسکول طلب کیا جانا غیر قانونی ہے اور ایسا کرنے والے اسکول انتظامیہ کے خلاف محکمہ جاتی کاروائی کی جائے گی۔ محکمہ تعلیم نے فیصلہ کیا ہے کہ جن اسکولوں میں گرمائی تعطیلات کے دوران اسٹاف سے کام لیا جاتا ہے ان اسکولوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے تاکہ اساتذہ اور غیر تدریسی عملہ کو بھی گرمائی تعطیلات کے دوران تعطیلات مل سکیں۔ محکمہ تعلیم کو موصولہ شکایات کے مطابق دونوں شہروں کے علاوہ ریاست کے کئی اضلاع میں تعطیلات کے دوران اساتذہ کو طلب کیا جاتا ہے تاکہ وہ داخلوں کے عمل میں مددگار ثابت ہوں یا پھر ان اساتذہ کو نصاب کی تیاری و تعلیمی سال کی منصوبہ بندی کیلئے طلب کیا جاتا ہے جو کہ اصولوں کے خلاف ہے۔ ریاستی حکومت کی جانب سے خانگی اسکولوں میں خدمات انجام دینے والے اساتذہ کے مفادات کے تحفظ کیلئے کئے جانے والے اقدامات کے مطابق گرمائی تعطیلات 22اپریل تا 11جون ہوں گے اوراس دوران جو اسکول بند نہیں رہیں گے ان کے خلاف سخت کاروائی کی جائے گی اور ان اسکولوں کے خلاف بھی کاروائی کو ممکن بنایا جائے گا جن اسکولوں میں اساتذہ کو تعطیلات کے دوران طلب کیا جاتا ہے۔ شکایت کنندگان نے بتایا کہ شہری علاقو ںمیں چلائے جانے والے اسکولو ںمیں اساتذہ سے اسکول میں داخلہ لانے کا کام بھی لیا جانے لگا ہے جبکہ اساتذہ کی یہ ذمہ داری نہیں ہوتی علاوہ ازیں جن اساتذہ کی جانب سے گرمائی تعطیلات کے دوران خدمات حاصل کی جاتی ہیں انہیں ہی تعطیلات کی تنخواہیں ایصال کی جاتی ہیں جبکہ اسکول میں تعلیم حاصل کرنے والے بچوں کی تعطیلات کی فیس بھی مکمل وصول کی جاتی ہیں لیکن اساتذہ کو تنخواہیں ایصال کرنے کے معاملہ میں کوتاہی کی جا رہی ہے۔ ان شکایات کے موصول ہونے کے بعد محکمہ تعلیم کے عہدیداروں نے اس بات کا فیصلہ کیا ہے کہ تمام اضلاع میں گرمائی تعطیلات کے دوران اسکولوں کی کارکردگی اور ملازمین کو ہراسانی کے واقعات کا نوٹ لیا جائے۔ محکمہ تعلیم کے عہدیداروں کے مطابق خانگی اسکولوں میں خدمات انجام دینے والے اساتذہ کو بھی گرمائی تعطیلات میں چھٹی کا مکمل اختیار حاصل ہے اور یہ تعطیلات با اجرت ہوتی ہیں اگر کوئی اسکول انتظامیہ ان اصولوں کی خلاف ورزی کرتا ہے تو ایسے میں اس کے خلاف کاروائی کا محکمہ کو مکمل اختیار حاصل ہے۔ گرمائی تعطیلات کے دوران اسکولو ںمیں علحدہ ٹیوشن کلاسس چلائے جانے اور خصوصی تربیت کے نام پر اساتذہ کی خدمات کے حصول پر بھی مکمل پابندی عائد رہے گی ایسا کرنے والے اسکول انتظامیہ پر بھاری جرمانے عائد کئے جاسکتے ہیںاور ان اسکولوں کی مسلمہ حیثیت بھی ختم کی جا سکتی ہے جو خصوصی تربیتی کلاسس کے نام پر ہائی اسکول کے طلبہ کے ٹیوشن کا انتظام کر رہے ہیں۔اساتذہ کا کہنا ہے کہ بیشتر اساتذہ جو کہ خانگی اسکولوں میں خدمات انجام دے رہے ہیں ان کے پاس انتظامیہ کی جانب سے تقرر کے احکام تک موجود نہیں ہیں تو وہ ایسی صورت میں کس طرح شکایت کرسکتے ہیںاور جن کے پاس تقرر ات کے احکام ہیں انہیں انتظامیہ کی ہراسانی کا سامنا نہیں ہوتا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT