Sunday , March 26 2017
Home / شہر کی خبریں / گرمیہر کور کیمپس کے حالات کی نمائندہ علامت

گرمیہر کور کیمپس کے حالات کی نمائندہ علامت

متنازعہ اظہار خیال پر عواقب سے بچنے کی امید فضول ‘ کرشنا ساگر
حیدرآباد 2 مارچ ( پی ٹی آئی ) تلنگانہ بی جے پی کے ایک لیڈر نے کہا کہ دہلی یونیورسٹی کی طالبہ گر میہر کور ملک کی ایسی کئی جامعات کی نمائندہ علامت ہیں جو ناکام تعلیم ‘ ناکام والدین اور سماجی تائیدی نظام کی پیداوار ہیں۔ بی جے پی کے ریاستی ترجمان کرشنا ساگر راؤ نے اپنے ایک بلاگ پوسٹ میں کہا کہ سارے ہندوستان میں یونیورسٹی کیمپسوں میں کئی گرمیہر کور ہیں۔ یہ نوجوان خاتون ( گر میہر کور ) ایک منتخب نوجوان طبقہ کی نمائندہ علامت ہے جو در اصل ناکام تعلیم ‘ ناکام والدین اور سماجی تائیدی نظام کی ناکامی کی پیادوار ہیں ۔ 20 سالہ گرمیہر کور پر سوشیل میڈیا پر ان کے مخالف آر ایس ایس موقف کی وجہ سے سخت تنقیدیں کی گئی تھیں۔ انہوں نے اپنے ایک ویڈیو میں ہندوستان اور پاکستان میں امن کی وکالت کی تھی ۔ کرشنا ساگر راؤ نے کہا کہ اگر کوئی متنازعہ اظہار خیال کرتا ہے تو اسے عواقب سے بچے رہنے کی توقع نہیں رکھنی چاہئے ۔ در اصل جیسا اظہار خیال ہوگا اتنا ہی وسیع بلکہ اس سے زیادہ عواقب ہوسکتے ہیں۔ ہتک کرنا یقینی طور پر غلط ہے ‘ پرتشدد دھمکیاں دینا یقینی طور پر غلط ہے تاہم کسی بھی طرح کا اظہار خیال واضح طور پر فطری طریقہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گرمیہر کور کے موقف پر اسے تنقید کا نشانہ بنانے کو اظہار خیال کی آزادی پر حملہ قرار دینا بچکانہ ہے ۔ یہ در اصل بچنے کی کوشش ہے ۔ اگر کسی میں حوصلہ ہے تو اسے اٹھ کھڑے ہونا اور اپنے اظہار خیال کے عواقب کا سامنا کرنا چاہئے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT