Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / گروپ امتحانات میں اردو تحریر کی اجازت کیلئے حکومت سے نمائندگی پر زور

گروپ امتحانات میں اردو تحریر کی اجازت کیلئے حکومت سے نمائندگی پر زور

جناب زاہد علی خاں ایڈیٹر سیاست سے سینکڑوں اقلیتی طلبہ کی ملاقات
حیدرآباد ۔ 24۔اکتوبر (سیاست نیوز) تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کے گروپ امتحانات کے پرچہ جات اردو میں تحریر کرنے کی اجازت کا اقلیتی طبقہ کی جانب سے دیرینہ مطالبہ ہے۔ گروپ I اور گروپ II امتحانات کی تیاری کرنے والے اقلیتی طلبہ کی کثیر تعداد نے آج ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خاں سے ملاقات کی اور اس سلسلہ میں اپنا اثر و رسوخ استعمال کرتے ہوئے حکومت سے نمائندگی کی خواہش کی۔ طلبہ نے بتایا کہ پبلک سرویس کمیشن نے گروپ I اور گروپ  II امتحانات کیلئے اعلامیہ جاری کردیا ہے اور یہ امتحانات نومبر میں منعقد ہوں گے۔ امتحانات کے ذریعہ 4000 سے زائد جائیدادوں پرتقررات کا امکان ہے۔ سرکاری جائیدادوں پر تقررات کیلئے 4 فیصد مسلم تحفظات پر عمل آوری کی صورت میں اقلیتی طلبہ کا انتخاب یقینی ہے۔ اگر طلبہ کو اردو زبان میں پرچہ لکھنے کی اجازت دیدی جائے تو اس سے نہ صرف اردو زبان سے انصاف ہوگا بلکہ اقلیتی طلبہ کے تقررات میں مدد ملے گی۔ حکومت نے تلگو اور انگریزی میں پرچہ لکھنے کی اجازت دی ہے جبکہ تلنگانہ میں اردو کو دوسری سرکاری زبان کا درجہ حاصل ہے۔ تلنگانہ ریاست کے قیام میں اردو زبان نے اہم رول ادا کیا۔ اگر تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن تلگو اور انگریزی کے ساتھ اردو زبان میں پرچہ فراہم کرے تو یہ اقلیتوں کے ساتھ انصاف ہوگا اور بیروزگار اقلیتی نوجوان روزگار سے وابستہ ہوسکتے ہیں۔ چیف منسٹر ، ڈپٹی چیف منسٹر ، وزیر تعلیم اور صدرنشین تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن سے فوری توجہ دینے کی خواہش کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ اقلیتی بہبود کے حالیہ جائزہ اجلاس میں اس سلسلہ میں حکومت سے سفارش کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے متعلقہ فائل چیف منسٹر کو روانہ کی جائے گی۔ اگر چیف منسٹر اردو میں امتحان کو منظوری دیدیں تو اس سے ہزاروں امیدواروں کو فائدہ ہوگا۔ چیف منسٹر جو اردو زبان کے دلدادہ ہیں اور ہمیشہ اردو سے انصاف کا دعویٰ کرتے ہیں ، ان کیلئے یہ مناسب وقت ہے کہ وہ اپنی اردو دوستی کا ثبوت دیں ۔ جناب زاہد علی خاں نے طلبہ کو یقین دلایا کہ وہ اس مسئلہ پر حکومت کے ذمہ داروں سے بات چیت کریں گے اور اقلیتی طلبہ سے انصاف کیلئے مساعی کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT