Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / گریٹر حیدرآباد میں جی ایچ ایم سی انتخابات کیلئے ٹی آر ایس کی انتخابی مہم میں شدت

گریٹر حیدرآباد میں جی ایچ ایم سی انتخابات کیلئے ٹی آر ایس کی انتخابی مہم میں شدت

ارکان پارلیمنٹ و اسمبلی، وزراء سرگرم، عوام کو ٹی آر ایس کے حق میں ووٹ دینے کی ترغیب، وعدوں پر عمل کا تیقن
حیدرآباد 24 جنوری (سیاست نیوز) گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن انتخابات میں میئر عہدے پر بہرصورت تلنگانہ راشٹرا سمیتی امیدوار کو فائز کرنے تمام وزراء، ارکان پارلیمان، ارکان اسمبلی و کونسل کو صدر ٹی آر ایس و چیف منسٹر مسٹر کے چندرشیکھر راؤ کی دی گئی ہدایت کے ساتھ ٹی آر ایس انتخابی مہم میں دیگر جماعتوں کے مقابلہ میں سرگرم عمل ہوچکی ہے۔ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن حدود میں ہر طرف ٹی آر ایس امیدواروں کی انتخابی مہم زبردست شدت اختیار کرگئی ہے۔ اسی انتخابی مہم کیلئے ٹی آر ایس سے وابستہ وزراء، ارکان پارلیمان، ارکان اسمبلی و کونسل بشمول ڈپٹی چیف منسٹر اُمور محکمہ ریونیو مسٹر محمد محمود علی، وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی مسٹر کے ٹی راما راؤ، وزیرداخلہ این نرسمہا ریڈی، وزیر کمرشیل ٹیکس مسٹر سرینواس یادو، وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ، وزیر آبکاری مسٹر پدما راؤ گوڑ، وزیر انڈومنٹ اندرا کرن ریڈی، وزیر زراعت ایل سرینواس ریڈی، ونود کمار، رکن پارلیمان ڈاکٹر کے کیشو راؤ وغیرہ نے اپنی انتخابی مہم میں تیزی پیدا کرتے ہوئے تمام علاقوں میں پیدل دورے، کارنر میٹنگس میں مصروف دیکھے جارہے ہیں۔ اس مہم کے ایک حصہ کے طور پر وزیر کمرشیل ٹیکس مسٹر ٹی سرینواس یادو نے مختلف مقامات کا دورہ کرتے ہوئے اپنے خطاب میں کہاکہ شہر حیدرآباد کو ایک انتہائی خوبصورت شہر بنانا ہی چیف منسٹر مسٹر کے چندرشیکھر راؤ کا مقصد ہے۔ انھوں نے کہاکہ سابق میں ریاست تلنگانہ کی تشکیل پانے اور ٹی آر ایس اقتدار حاصل کرنے پر ریاست تلنگانہ تاریکی میں ڈوب جانے کا اظہار کیا گیا تھا لیکن کے سی آر کی زیرقیادت تلنگانہ میں تشکیل پانے کے بعد ریاست تلنگانہ تاریکی میں ڈوب جانے کے بجائے آج دیگر ریاستوں بالخصوص آندھراپردیش کے مقابلہ میں برقی سربراہی بہتر انداز میں کی جارہی ہے اور اس کا سہرا مسٹر چندرشیکھر راؤ کے سر ہی جاتا ہے۔ علاوہ ازیں شہر کے عوام کو درپیش پینے کے پانی کے درپیش مسئلہ کی یکسوئی کے لئے چیف منسٹر نے دریائے گوداوری سے شہر کو پانی لانے کے لئے اقدامات کئے۔ وزیر موصوف نے کہاکہ غریب لڑکیوں بشمول مسلم لڑکیوں کی شادی کے لئے کلیان لکشمی، شادی مبارک اسکیم کا آغاز کیا گیا۔ آر ٹی سی کو نقصانات سے باہر نکالنے کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کیا گیا۔ شہر حیدرآباد میں 25 ہزار کروڑ روپئے کی مالیت سے ترقیاتی اقدامات کئے گئے۔ مسٹر سرینواس یادو نے کہاکہ چیف منسٹر کے سی آر نے بڑے پیمانے پر ملازمتوں کی فراہمی کے اقدامات کا آغاز کیا ہے۔ ریاست تلنگانہ بشمول حیدرآباد میں امن و ضبط کی برقراری کو یقینی بنایا بلکہ پولیس محکمہ کو مستحکم بنانے کے لئے تمام تر عصری سہولتیں فراہم کی گئیں۔ انھوں نے مزید بتایا کہ غیر مجاز تعمیرات اور غیر مجاز لے آؤٹس کو باقاعدہ بنانے کے لئے انتہائی شفاف طریقہ کار اختیار کیا گیا۔ مسٹر سرینواس یادو نے کہاکہ چیف منسٹر مسٹر کے چندرشیکھر راؤ کی زیرقیادت تلنگانہ حکومت کے ان اقدامات کے تعلق سے عوام میں زبردست مثبت ردعمل پایا جارہا ہے اور عوام ٹی آر ایس امیدواروں کو بھاری اکثریت سے کامیاب بناتے ہوئے ٹی آر ایس کو میئر عہدے پر فائز کرنے اور جی ایچ ایم سی آفس پر ٹی آر ایس کا پرچم لہرانے کیلئے اپنا اہم رول ادا کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT