Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ’’گمراہ کن احتجاجی مظاہروں سے گریز کیا جائے ‘‘

’’گمراہ کن احتجاجی مظاہروں سے گریز کیا جائے ‘‘

مسلم نوجوانوں اور پروفیشنلس کو چوکنا رہنے کا مشورہ

حیدرآباد۔ 18 فروری (آئی این این) مسلم پروفیشنلس نیٹ ورک (ایم پی این) نے بعض احتجاجی مظاہروں کے دوران مبینہ طور پر مخالف ہند نعروں کی سخت مذمت کی اور مسلم طلباء و پروفیشنلس کو مشورہ دیا کہ وہ اس طرح کے گمراہ کن احتجاج میں شریک نہ ہوں۔ ایم پی این کے صدر محمد ابوبکر نے ایک صحافتی بیان میں کہا کہ ’’ہم اس بات کو تسلیم کرتے ہیں کہ بی جے پی حکومت کی متواتر منفی مہم کے سبب مسلم نوجوانوں اور پروفیشنلس میں حکومت کے خلاف شدید جذبات پائے جاتے ہیں۔ انتہا پسند دائیں بازو طاقتیں چاہتی ہیں کہ مسلم نوجوان ، بی جے پی حکومت کے خلاف احتجاج کریں تاکہ انہیں مخالف قوم سرگرمیوں کی شکل میں پیش کیا جاسکے۔ میڈیا کا ایک گوشہ بھی ان طاقتوں کے جال میں پھنس چکا ہے لہذا مسلم نوجوانوں بالخصوص پروفیشنلس کیلئے ضروری ہے کہ وہ ایسے حالات میں زیادہ سے زیادہ محتاط رہیں۔ ایم پی این نے مسلمانوں کو مشورہ دیا کہ وہ تعلیم اور کریر پر توجہ دیں۔ ایم پی این اس ضمن میں مختلف کمپنیوں میں خدمات انجام دے رہے مسلم پروفیشنلس سے ربط قائم کررہی ہے اور انہیں یہ مشورہ دیا جارہا ہے کہ وہ عدم رواداری ، اظہار خیال کی آزادی وغیرہ جیسے غیرضروری بحث میں نہ اُلجھیں۔ اس طرح کی سرگرمیوں سے کوئی فائدہ ہونے والا نہیں اور اس کے برعکس عدم امتیاز مزید بڑھے گا۔ سابق صدر اور بانی رکن ایم پی این جاوید سکندر نے کہا کہ مسلم نوجوانوں کو چاہئے کہ وہ اپنے مستقبل کی فکر کریں اور کسی کے جھانسے میں نہ آئیں ، ان کا مستقبل تعلیم ، ہنر ، سخت محنت اور ترقی میں مضمر ہے۔

TOPPOPULARRECENT