Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / گنیش جلوس کا تاخیر سے آغاز ، جلد اختتام

گنیش جلوس کا تاخیر سے آغاز ، جلد اختتام

پولیس کے موثر انتظامات ، لڈو کا 14 لاکھ 65 ہزار روپئے میں ہراج

حیدرآباد ۔ /15 ستمبر (سیاست نیوز) مرکزی گنیش وسرجن جلوس کا آج رات پرامن اختتام عمل میں آیا ۔ دونوں شہروں میں موسلادھار بارش کے سبب گنیش جلوس کا آغاز تاخیر سے ہوا لیکن اس جلوس میں 10 تا 15 لاکھ بھکتوں نے شرکت کی ۔  11 دن کے گنیش تہوار کے اختتام پر پرانے شہر کے علاقے بالاپور کیشو گری سے نکالا گیا جبکہ پہلی مرتبہ  شہر کے سب میں بڑے خیریت آباد گنیش مورتی کو وسرجن کے دن ہی دوپہر کے وقت حسین ساگر جھیل میں ڈالا گیا ۔ حیدرآباد سٹی پولیس نے اس موقع پر 25 ہزار سے زائد پولیس عملہ کو متعین کیا تھا اور دونوں شہروں میں جملہ 11,074 گنیش مورتیوں کا وسرجن عمل میں آیا ۔ پولیس کے اعلیٰ عہدیدار نے سٹی پولیس کمانڈ کنٹرول سنٹر کے ذریعہ مرکزی جلوس پر کڑی نظر رکھے ہوئے تھے اور وزیر داخلہ مسٹر این نرسمہا ریڈی ، ڈائرکٹر جنرل پولیس تلنگانہ مسٹر انوراگ شرما اور کمشنر پولیس حیدرآباد مسٹر مہیند ریڈی نے ہیلی کاپٹر کے ذریعہ فضائی معائنہ کرتے ہوئے گنیش وسرجن جلوس سے متعلق تمام تفصیلات حاصل کی ۔ 21 کیلو وزنی بالا پور گنیش کا لڈو کا 14 لاکھ 65 ہزار  میں ہراج کیا گیا اور اس لڈو کو کیسرا سے تعلق رکھنے والے اسکائی لیاب ریڈی نے ہراج کے ذریعہ حاصل کیا ۔ موسلادھار بارش کے سبب گنیش بھگت اپنے مکانوں سے باہر نہیں نکلے تھے لیکن دوپہر میں بارش تھمنے کے سبب بھکتوں کی کثیر تعداد سڑکوں پر پائی گئی ۔ پرانے شہر کے علاقے سے مکمل گنیش کی مورتیاں آج رات 8 بجے حسین ساگر جھیل کیلئے روانہ ہوگئی تھی ۔ گنیش وسرجن کے دوران روڈ نمبر 12 بنجارہ ہلز میں گنیش مورتی کو کرین کے ذریعہ لاری میں منتقل کرنے کے سبب حادثہ کا شکار ہوگیا اور گنیش مورتی کو نقصان پہونچا جس کے نتیجہ میں وہاں ہلکی سی کشیدگی پیدا ہوگئی ۔ پولیس نے فی الفور کارروائی کرتے ہوئے حالات پر قابو پالیا ۔ اس موقع پر بھاگیہ نگر گنیش اتسو سمیتی کے ارکان نے تاریخی چارمینار اور معظم جاہی مارکٹ کے ذریعہ ڈائس قائم کئے جس کے ذریعہ گنیش مورتیوں کے وسرجن کیلئے گزرنے والے بھکتوں کا استقبال کیا۔

TOPPOPULARRECENT