Thursday , August 17 2017
Home / اضلاع کی خبریں / گنے کے کسانوں کی حوصلہ شکنی

گنے کے کسانوں کی حوصلہ شکنی

حکومت پر وعدہ خلافی کا الزام، سدرشن ریڈی کا بیان
بودھن۔/9اکٹوبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) سابقہ ریاستی وزیر آبپاشی مسٹر پی سدرشن ریڈی نے یہاں بودھن ڈیویژن کے کسانوں کے ایک اجلاس میں شرکت کرنے کے بعد انہوں نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ بودھن کے کسان اس سال تین لاکھ ٹن گنے کی فصل تیار کرنے راضی ہیں لیکن حکومت کی طرف سے گنے کے کاشتکاروں کی حوصلہ شکنی کرنے کی وجہ سے کسان دیگر فصلوں کو اگانے کا خطرہ مول لے رہے ہیں۔ مسٹر سدرشن ریڈی نے کہا کہ نظام دور حکومت سے بودھن علاقے کے کسانوں کی پہلی ترجیح گنے کی پیداوار رہی۔ انہوں نے کہا کہ بودھن ڈیویژن کی زمین اور یہاں کی آب و ہوا گنے کی فصل کیلئے سازگار ہے۔ مسٹر ریڈی نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت یہاں کے کسانوں سے نظام شوگر فیکٹری کو حکومت کے زیر انتظام لینے کا وعدہ کرتے ہوئے برسر اقتدار آنے کے بعد NSF کو مکمل طور پر بند کردیا۔ مسٹر ریڈی نے کہا کہ فیکٹری کی کشادگی اور اس کو سابقہ حالت میں واپس لانے اس ماہ کی 14 تاریخ سے مختلف منڈلوں کا کسانوں کے ساتھ دورہ کرتے ہوئے عوام میں بیداری لانے مہم کا آغاز کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ 14اکٹوبر کو موضع کلور سے پدیاترا کا آغاز ہوگا اور براہ موضع ہونسہ مسٹر ریڈی کسانوں کے وفد کے ساتھ موضع سالورہ پہونچیں گے۔ سالورہ میں شب بسری کے بعد 15اکٹوبر کو پیدماوندی، پگڑا پلی اور 16اکٹوبر کو رنجل اور ایڑپلی منڈلوں سے ہوتے ہوئے 17 اکٹوبر کو برائے اچن پلی بودھن پہنچیں گے۔ اس پریس کانفرنس میں سابق ضلع صدر کانگریس پارٹی جناب طاہر بن حمدان، بودھن منڈل پریسیڈنٹ گنگا شنکر صدر ٹاؤن جی پرساد، صدر میناریٹی سیل شیخ فصیح الدین ، ٹاؤن نائب صدر کانگریس میر الیاس علی اور ارکان بلدیہ موجودتھے۔

TOPPOPULARRECENT