Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / گوامیں پرمود متالک کے داخلہ کے خلاف امتناع برقرار

گوامیں پرمود متالک کے داخلہ کے خلاف امتناع برقرار

پناجی۔/22ستمبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) حکومت گوا نے متنازعہ سری رام سینا کے صدر پرمود متالک کے خلاف عائد پابندی پر 14جنوری 2016ء تک توسیع کردی ہے۔ ریاستی محکمہ داخلہ نے گوا میں پرمود متالک کے داخلہ پر پابندی رہنے کے نئے احکامات صادر کئے ہیں جبکہ سپریم کورٹ میں اس پابندی کو چیلنج کرتے ہوئے پیش کردہ ان کی عرضی کو مسترد کردیا تھا۔ یہ امتناع گزشتہ 4سال سے نافذ ہے۔ امتناعی احکامات میں محکمہ پولیس کی ایک رپورٹ کا حوالہ دیا گیا ہے جس میں یہ اندیشہ ظاہر کیا گیا ہے کہ متالک کے داخلہ سے ریاست میں امن و امان کا مسئلہ پیدا ہوسکتا ہے۔ ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ نے پولیس سپرنٹنڈنٹ کی رپورٹ کی بنیاد پر صدر سری رام سینا پرمود متالک اور ان کے حامیوں کے داخلہ پر پابندی میں توسیع کردی ہے اور یہ جواز پیش کیا گیا ہے کہ امتناع برخاست کردینے سے ریاست میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور سیاحت متاثر ہوسکتی ہے اور بتایا کہ تنظیم کے خلاف آئندہ سال 14جنوری تک امتناع جاری رہے گا۔ متالک اور ان کی تنظیم سری رام سینا  2009ء میں اس وقت سرخیوں میں آگئے تھے جب بنگلور کے ایک پب میں ایک مرد اور خاتون پر حملہ کردیا گیا تھا۔

قبل ازیں پاسپورٹ کے اجراء کے لئے ان کی درخواست ماہ مئی میں مسترد کردی گئی تھی کیونکہ انہوں نے اپنی بائیو میٹرک تفصیلات فراہم کرنے سے انکار کردیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT