Sunday , August 20 2017
Home / ہندوستان / گوا کے سابقہ چیف منسٹر کامت کے قیام گاہ کی تلاشی کرائم برانچ کو رشوت ستانی کیس میں اہم فائیل مطلوب

گوا کے سابقہ چیف منسٹر کامت کے قیام گاہ کی تلاشی کرائم برانچ کو رشوت ستانی کیس میں اہم فائیل مطلوب

پناجی ۔ 20 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : گوا پولیس نے آج لوئیس برگر رشوت ستانی کیس کے سلسلہ میں سابق چیف منسٹر ڈگمبر کامت کی قیام گاہ اور دیگر مقامات کی تلاشی لی ۔ کرائم برانچ پولیس کے ایک سینئیر عہدیدار نے بتایا کہ صبح 6 بجے شروع کی گئی تلاشی کارروائی جاری ہے ۔ کرائم برانچ کی یہ کارروائی 61 سالہ کانگریس لیڈر کی ڈسٹرکٹ کورٹ میں درخواست ضمانت قبل از گرفتاری کی منظوری کے ایک دن کی جارہی ہے جب کہ اس کیس میں ان سے دو مرتبہ پوچھ تاچھ کی گئی تھی ۔ کرائم برانچ عہدیداروں کے ساتھ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ کی ایک ٹیم بھی تھی جس نے اسکینڈل سے متعلق ایک کیس درج کیا ہے ۔ پولیس حکام کی اطلاع کے بموجب مارگاؤ اور پناجی ٹاون میں 4 مختلف مقامات پر تلاشی لی گئی ۔ اگرچیکہ کامت اصل مکان پناجی میں ہے لیکن ان کے رشتہ دار مارگاؤں میں رہتے ہیں ۔ تحقیقاتی عہدیدار ایک گمشدہ اہم فائیل کی تلاش میں ہے جس میں امریکی کمپنی لوئیس برگر کو آبپاشی پراجکٹ کی کنسلٹنسی منظور کرنے کے متعلق تفصیلات درج ہیں ۔ اس پراجکٹ کے لیے جاپان انٹرنیشنل کوآپریشن ایجنسی (JICA) نے فنڈس فراہم کئے ہیں ۔ کرائم برانچ نے رشوت ستانی کیس میں کامت اور سابق وزیر تعمیرات عامہ چرچل الیماؤ اور دیگر کا نام درج کیا ہے ۔ یہ کیس اس وقت منظر عام پر آیا جب لوئیس برگر نے از خود یہ اعتراف کیا کہ واٹر پراجکٹ کے لیے کنسلٹنسی کنٹراکٹ منظور کرنے کے لیے گوا کے ایک وزیر کو بھاری رشوت دی گئی تھی ۔ یہ رشوت سال 2010 میں دی گئی تھی ۔ جب ڈگمبر کامت ریاست کے چیف منسٹر تھے ۔ انہوں نے ان الزامات کو بے بنیاد اور سیاسی محرکات پر مبنی قرار دیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT