Tuesday , October 24 2017
Home / شہر کی خبریں / گورنمنٹ جونیر کالجس میں تمام تر سہولیات کی فراہمی

گورنمنٹ جونیر کالجس میں تمام تر سہولیات کی فراہمی

کنٹراکٹ لکچررس کی خدمات باقاعدہ بنانے عنقریب فیصلہ : کے سری ہری
حیدرآباد ۔ 28 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ امور تعلیم مسٹر کے سری ہری نے آندھرائی حکمرانوں اور کارپوریٹ تعلیمی اداروں کے قبضہ میں پائے جانے والے انٹرمیڈیٹ تعلیمی شعبہ کا تحفظ کرنے کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ سابق حکمرانوں کی غفلت و لاپرواہی کے نتیجہ میں کارپوریٹ تعلیمی اداروں کے قیام سے تلنگانہ میں گورنمنٹ جونیر کالجوں کا موقف کمزور ہوگیا ۔ ان تمام حالات کو پیش نظر رکھتے ہوئے حکومت گورنمنٹ جونیر کالجوں کو مستحکم بنانے کے لیے اقدامات کررہی ہے تاکہ طلباء کو گورنمنٹ جونیر کالجوں میں داخلوں کے لیے ترغیب دی جاسکے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر کے سری ہری نے تلنگانہ بورڈ آف انٹر میڈیٹ ایجوکیشن جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے زیر اہتمام مفت انٹرمیڈیٹ بکس ( کتب ) کی تقسیم کے لیے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مذکورہ اظہار کیا اور مفت انٹرمیڈیٹ کتابوں کی تقسیم کا آغاز کرتے ہوئے کہا کہ مفت انٹر میڈیٹ تعلیم کو ملک بھر میں مثالی بنانے کے لیے اقدامات کئے جارہے ہیں اور چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے مقاصد کے مطابق کے جی تا پی جی تعلیمی پالیسی کے لیے مفت انٹر میڈیٹ تعلیم کے آغاز سے راہ ہموار ہوچکی ہے ۔ جس کی وجہ سے گورنمنٹ جونیر کالجوں میں زیر تعلیم 1.49 لاکھ طلباء وطالبات کو زبردست فائدہ پہونچے گا ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے مزید کہا کہ سال 2016-17 تعلیمی سال سے تجرباتی اساس پر بعض علاقوں میں کے جی تا پی جی تعلیمی پالیسی پر عمل آوری کی جائے گی ۔ مسٹر کے سری ہری نے کہا کہ گورنمنٹ جونیر کالجوں میں ایک طویل عرصہ سے کنٹراکٹ کی بنیاد پر خدمات انجام دینے والے لکچررس کی خدمات کو باقاعدہ بنانے کے لیے مسٹر چندر شیکھر راؤ کی زیر قیادت تلنگانہ حکومت انتہائی سنجیدہ ہے اور اس سلسلہ میں خود تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے بھی اپنے انتخابی منشور میں کئے گئے وعدے کو بھی پورا کرنے کے لیے ہر ممکنہ کوشش کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ فی الوقت کنٹراکٹ لکچررس کی خدمات کو باقاعدہ بنانے سے متعلق رہنمایانہ خطوط ریاستی سکریٹریٹ کے محکمہ جنرل اڈمنسٹریشن کی جانب سے مرتب کئے جارہے ہیں ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے انکشاف کیا کہ آئندہ آٹھ تا دس یوم میں کنٹراکٹ لکچررس کی خدمات کو باقاعدہ بنانے اور تقررات عمل میں لانے کا حکومت فیصلہ کرے گی ۔ علاوہ ازیں جونیر کالجس میں خدمات انجام دینے والے تدریسی و غیر تدریسی اسٹاف کے دیرینہ حل طلب مسائل کی عاجلانہ یکسوئی کے لیے بھی اقدامات کرنے کا ڈپٹی چیف منسٹر نے تیقن دیا اور کہا کہ ریاست تلنگانہ کے تمام گورنمنٹ جونیر کالجوں میں تمام تر بنیادی سہولتیں فراہم کرنے کے لیے بھی اقدامات کئے جارہے ہیں اور اس سلسلہ میں 140 کروڑ روپئے جاری کیے گئے ۔ اس تقریب سے سکریٹری تلنگانہ بورڈ آف انٹر میڈیٹ ایجوکیشن ڈاکٹر اشوک تلنگانہ بورڈ آف انٹر میڈیٹ ایجوکیشن جوائنٹ ایکشن کمیٹی صدر نشین مدھو سدن ریڈی نے بھی مخاطب کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT