Monday , September 25 2017
Home / Top Stories / گورکھپور، شہزادہ کا تفریحی مقام نہیں : آدتیہ ناتھ

گورکھپور، شہزادہ کا تفریحی مقام نہیں : آدتیہ ناتھ

 

’ تفریح گاہ ‘ نہیں ’ قتل گاہ ‘ ہے ، کانگریس کا جواب
نئی دہلی ۔ 19 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : کانگریس پارٹی نے راہول گاندھی کے دورہ گورکھپور پر آدتیہ ناتھ کی تنقید کے جواب میں کہا کہ اترپردیش کا مشرقی ٹاون ’تفریحی مقام ‘ نہیں بلکہ عملاً ’ قتل گاہ ‘ ہے ۔ آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے ترجمان ابھیشک سنگھوی نے کہا کہ گورکھپور میں جہاں یہ سانحہ پیش آیا ۔ چیف منسٹر آدتیہ ناتھ لوک سبھا رکن تھے ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر نچلی سطح کی سیاست کررہے ہیں اور اس واقعہ کی اہمیت کم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔
انہوں نے کہا کہ آدتیہ ناتھ کا ریمارک غریب اور بے یار و مددگار بچوں کی توہین ہے جنہیں موت کی نیند سلادیا گیا ۔ وہ فیصلہ عوام پر چھوڑتے ہیں وہی فیصلہ کریں کہ راہول گاندھی کے خلاف سیاسی برتری کے لیے آدتیہ ناتھ نے اس سانحہ اور سنگینی کو کم کرتے ہوئے بچوں کی توہین کی ۔۔

 

گورکھپور ۔ /19 اگست (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش کے چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ نے آج کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی کو ان کے دورہ گورکھپور پر تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ دہلی میں بیٹھنے والے یوراج (شہزادہ) گورکپور کو ایک تفریحی مقام نہیں بناسکتے ۔ آدتیہ ناتھ جو یہاں کے بی آر ڈی ہاسپٹل میں 71 کمسن بچوں کی اموات کے بعد دماغی بخار کی مہلک وباء سے نمٹنے کیلئے ضلع میں صفائی مہم کا آغاز کررہے تھے ۔ اپنے پیشرو اور سماج وادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش یادو کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا ۔ گورکھپور میں متاثرہ خاندانوں کے ارکان سے راہول گاندھی کی ملاقات سے چند گھنٹوں قبل انہیں طنز کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ’’میں محسوس کرتا ہوں کہ شہزادہ لکھنو میں بیٹھے ہوئے ہیں ۔ دہلی میں بیٹھنے والے یوراج صفائی کی اس مہم کی اہمیت کو نہیں جانتے ۔ وہ اس مقام کو تفریحی مقام بنانے کے طور پر یہاں آئیں گے ۔ ہم اس کی اجازت نہیں دیں گے ‘‘ ۔
یوگی آدتیہ ناتھ نے یہاں سوچھ اترپردیش اور سوستھ (صحتمند) اترپردیش مہم کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ ’’اگر کوئی مشرقی اترپردیش اور گورکھپور کے عوام کی عزت نفس کو کھلا چیلنج کرتا ہے تو وہ خود ہی آگے آئیں گے اور شعور بیداری کے ذریعہ اس مہلک وباء کا مقابلہ کریں گے ‘‘ ۔ اس دوران کانگریس نے چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ پر جوابی وار کرتے ہوئے کہا کہ اس (یوگی کے طنز) سے ان میں اس بات پر پیدا شدہ خوف و ہراسانی کا اظہار ہوگیا ہے کہ راہول گاندھی کا دورہ متاثرین کیلئے انصاف کو یقینی بنائے گا ۔ اترپردیش کانگریس کمیٹی کے صدر راج ببر نے کہا کہ ’’چیف منسٹر نے کوئی کارروائی نہیں کی اور اس مسئلہ سے توجہ ہٹانے کی کوشش کررہے ہیں اور اس قسم کی اوچھی بیان بازی کے ذریعہ چیف منسٹر کے عہدہ کی اہمیت اور وقار کو گھٹارہے ہیں۔ راہول جی غریبوں کا دکھ د رد باٹنے کیلئے اور ان سے اظہار ہمدردی کے لئے یہاں پہونچ رہے ہیں لیکن یہ پوچھنا کہ وہ کیوں آرہے ہیں ۔ یہ اس بات پر چیف منسٹر کے خوف و سنسنی کا اظہار کرتا ہے کہ وہ (راہول) انصاف کو یقینی بنائیں گے ‘‘ ۔ راج ببر اس موقع پر راہول گاندھی کے دورہ میں شامل سینئر قائدین غلام نبی آزاد اور آر پی این سنگھ کے ساتھ تھے ۔ کانگریس کے نائب صدر نے متاثرہ خاندانوں کے ارکان سے ملاقات کرتے ہوئے مکمل تائید کا یقین دلایا اور کہا کہ وہ اعلیٰ حکام سے اس مسئلہ کو رجوع کریں گے تاکہ مستقبل میں اس قسم کے المناک واقعہ کا اعادہ نہ ہوسکے ۔ اکھلیش نے صفائی مہم پر چیف منسٹر یوگی کو طنز و تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ’’کھوکھلے وعدے اور ہلکی بیان بازی سے کب تک عوام کو بہلایا جائے گا ۔ (کیا) ایسے بنے گا وسوچھ یو پی اور سوستھ یو پی ‘‘ ۔

TOPPOPULARRECENT