Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / گولڈپر مداخلت سے مودی کی سیاسی زندگی داؤ پرلگ جائے گی

گولڈپر مداخلت سے مودی کی سیاسی زندگی داؤ پرلگ جائے گی

کرنسی تنسیخ سے عام آدمی کی زندگی تاحال مفلوج، راما کرشنا سی پی آئی لیڈرکا خطاب
حیدرآباد۔/4ڈسمبر، ( سیاست نیوز) آندھرا پردیش ریاستی سی پی آئی کمیٹی نے وزیر اعظم مسٹر نریندر مودی کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا بلکہ ان کے خلاف سنسنی خیز متنازعہ ریمارکس کرتے ہوئے کہا کہ خواتین کے گولڈ کے معاملہ سے متعلق معاملہ میں وزیر اعظم مداخلت کریں گے تو خود بخود مسٹر مودی کی سیاسی زندگی ہی داؤ پر لگ جائے گی اور وہ خواتین سے چھیڑ لیں گے تو وہ کہیں کے بھی نہیں رہیں گے۔ ضلع سی پی آئی عاملہ کے منعقدہ اجلاس سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے مسٹر کے راما کرشنا ریاستی سکریٹری و سابق رکن اسمبلی سی پی آئی نے یہ بات کہی، اور بتایا کہ ایک ہزار اور پانچ سو روپئے کے کرنسی نوٹوں کو منسوخ کئے ہوئے 25یوم ہوچکے ہیں لیکن عام آدمی ، غریب و متوسط طبقہ کے افراد ، سرکاری و خانگی ملازمین ، پنشنرس کی تکالیف میں کوئی کمی نہیں ہوئی ہے بلکہ ان کی تکالیف میں مزید اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسی جامع منصوبہ بندی کے بغیر ایک ہزار اور پانچ سو روپئے کے کرنسی نوٹوں کو اچانک منسوخ کرکے وزیر اعظم نے عوام کو مسائل و مشکلات میں ڈھکیل دیا ۔ مسٹر راما کرشنا نے مرکزی وزراء اور اہم بی جے پی قائدین کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ غریب عوام چھوٹے نوٹ نہ ملنے پر مشکلات و مصائب سے دوچار ہیں لیکن مسٹر بنڈارو دتاتریہ مرکزی وزیر ، جی جناردھن ریڈی بی جے پی قائد کروڑ ہا روپئے خرچ کرکے شادیوں کے ضمن میں خرچ کررہے ہیں لیکن اتنے بڑے پیمانے پر برسر عام کروڑہا روپئے خرچ کرنے کے باوجود کوئی بھی حکومت اس طرف توجہ ہیں نہیں دے رہی ہے لیکن شادی ہوئے 15 دن گذر جانے کے بعدانکم ٹیکس عہدیدار مسٹر جی جناردھن ریڈی کے مکان جاکر صرف اپنے فرض کی تکمیل کرکے واپس ہونے کا مضحکہ اڑایا۔ مسٹر راما کرشنا سکریٹری سی پی آئی آندھرا پردیش کمیٹی نے وزیر اعظم کے تعلق سے بعض سخت و متنازعہ ریمارکس کئے اور کہا کہ 21اور 22ڈسمبر کو حیدرآباد میں منعقد ہونے والے قومی سی پی آئی عاملہ کے اجلاس میں عوام کو درپیش مختلف مسائل پر تفصیلی غور و خوض کئے جانے کے بعد سی پی آئی اپنے مستقبل کے لائحہ عمل کا اعلان کرے گی۔ جبکہ قومی سی پی آئی نے دلتوں، گریجنوں اور خواتین پر پیش آنے والے حملوں کے خلاف جاریہ ماہ 6ڈسمبر کو امبیڈکر کی وردھنتی کے موقع پر ملک گیر سطح پر احتجاج منظم کرنے کی سی پی آئی نے اپنے تمام حامیوں و کارکنوں سے پرزور اپیل کی۔ سکریٹری سی پی آئی آندھرا پردیش کمیٹی نے کہا کہ قانون ریاستی تقسیم میں دیئے گئے کسی ایک تیقن کو بھی پورا نہیں کیا گیا بلکہ آندھرا پردیش کے پانچ کروڑ عوام کو دھوکہ دیا جارہا ہے۔ سکریٹری سی پی آئی آندھرا پردیش نے کہا کہ جاریہ ماہ9 اور 10 ڈسمبر کو وجئے واڑہ میں منعقد ہونے والے ریاستی سی پی آئی عاملہ کے اجلاس میں مختلف مسائل پر تفصیلی غور و خوض کرنے کے بعد ہی حکومت کے خلاف کئے جانے والے احتجاجی پروگراموں کا اعلان کیا جائے گا اور عوامی مسائل پر جنا سینا اور سی پی آئی کا ایک ہی ایجنڈہ رہے گااور اس ایجنڈہ سے اتفاق کرکے آگے آنے والی کسی بھی پارٹی سے متحدہ طور پر جدوجہد کرے گی۔ ضلع سکریٹری سی پی آئی مسٹر جگدیش نے کہا کہ ضلع کو سلسلہ وار انداز میں خشک سالی سے متاثرہ قرار دینے کے باوجود کسی قسم کی امداد فراہم نہیں کی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT