Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / گٹلہ بیگم پیٹ کی وقف اراضی پرناجائز قبضوں کی برخواستگی

گٹلہ بیگم پیٹ کی وقف اراضی پرناجائز قبضوں کی برخواستگی

بڑے پیمانے پر انہدامی کارروائی ‘ قابضین کی جانب سے رکاوٹ ڈالنے کی کوشش
حیدرآباد۔20 فبروری (سیاست نیوز) عیدگاہ گٹلہ بیگم پیٹ کی وقف اراضی پر ناجائز قبضوں کی برخاستگی کے سلسلہ میں اہم قدم اٹھاتے ہوئے ریونیو اور پولیس کی مدد سے بڑے پیمانے پر انہدامی کارروائی انجام دی گئی۔ چیف ایگزیکٹیو آفیسر وقف بورڈ محمد اسد اللہ نے ضلع کلکٹر حیدرآباد اور متعلقہ بلدیہ کے عہدیداروں کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے انہدامی کارروائی میں تعاون کی خواہش کی تھی۔ سپریم کورٹ نے 90 ایکڑ اراضی کے سلسلہ میں حال ہی میں ناجائز قابضین کے ملکیت کے دعوئوں کو مسترد کرتے ہوئے وقف بورڈ کو ہدایت دی تھی کہ وہ نیا نوٹفکیشن جاری کرے اور دیگر دعویداروں کو ملکیت ثابت کرنے کا موقع فراہم کیا جائے۔ وقف بورڈ کی جانب سے نئے نوٹفکیشن کی اجرائی سے قبل غیرمجاز قبضوں کی برخاستگی کا فیصلہ کیا گیا۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد اوقافی اراضی پر غیر مجاز تعمیرات میں شدت پیدا ہوچکی تھی۔ بتایا جاتا ہے کہ وقف بورڈ نے انہدامی کارروائی کی تکمیل کے بعد نیا اعلامیہ جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کے بعد ملکیت کے دیگر دعویدار وقف ٹربیونل سے رجوع ہوکر اپنے دستاویزات پیش کرسکتے ہیں۔ وقف بورڈ کے عہدیداروں کی ٹیم نے پولیس اور ریونیو حکام کے تعاون سے اتوار کی صبح 11 بجے انہدامی کارروائی کا آغاز کیا جو سہ پہر 3 بجے تک جاری رہی۔ ڈپٹی کلکٹر رنگاریڈی، انچارج تحصیلدار شیرلنگم پلی اور بلدیہ کے عہدیداروں کے علاوہ مقامی پولیس کے حکام بھی موجود تھے۔ کارروائی کے آغاز کے ساتھ ہی غیر مجاز قابضین اور ان کے حامیوں نے احتجاج منظم کرتے ہوئے رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کی۔ انہدامی کارروائی میں مصروف 3 جے سی بی کو روکنے کی کوشش کی گئی اور احتجاجی اپنے مطالبہ کی تائید میں حکام سے الجھ پڑے۔ اس موقع پر علاقہ میں ہلکی سی کشیدگی پیدا ہوگئی تاہم پولیس نے مداخلت کرتے ہوئے صورتحال پر قابو پالیا۔ ڈپٹی کلکٹر رنگاریڈی نے ملکیت کے دعویداروں سے کہا کہ یہ کارروائی سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں انجام دی جارہی ہے۔ ( سلسلہ صفحہ 6پر )

TOPPOPULARRECENT