Thursday , October 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / گھریلو جھگڑوں سے تنگ شخص کی خودکشی

گھریلو جھگڑوں سے تنگ شخص کی خودکشی

سرکاری ہاسپٹل جگتیال میں نعش کا عدم تحفظ ، رشتہ داروں کا احتجاج

جگتیال ۔ /9 جولائی (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) شہر جگتیال کے محلہ آمینہ آباد میں پیش آئے واقعہ میں کورٹلہ کے متوطن ارشد پاشاہ ولد حمید پاشاہ جس کی شادی سال 2006 ء میں کورٹلہ سے تعلق رکھنے والی عائشہ صدیقہ سے انجام پائی تھی جس کو تین لڑکے ہیں ۔ دونوں ذریعہ معاش کیلئے جگتیال آمینہ آباد میں مقیم تھے ۔ ارشد پاشاہ پیشہ سے ڈرائیور تھا جو محمد حسین مینگو مرچنٹ کے پاس گاڑی چلایا کرتا تھا اور نشہ کا عادی تھا جس کی وجہ سے میاں بیوی کے درمیان آئے دن جھگڑے ہوا کرتے ۔ ارشد پاشاہ کے والدین کئی بار دونوں کو سمجھائے گزشتہ روز دوبارہ میاں بیوی کے درمیان جھگڑا ہوا ، تنگ آکر عائشہ صدیقہ نے اپنے بچوں کے ساتھ اپنی بڑی خالہ کے پاس پونے کو چلی گئی جس سے دلبرداشتہ شوہر ارشد پاشاہ نے اپنے والدین کو بیوی کی چلے جانے کی اطلاع دی اس کے بعد فون کاٹ دیئے جس پر اس کے چھوٹے بھائی نے فون پر ربط پیدا کرنے پر غصہ کرکے فون کاٹ دیا ۔ بعد ازاں اس نے فون پر بات نہ کرنے پر اس کے پڑوس میں واقع بڑی بہن کو فون کیا اور دیکھنے کیلئے کہا جس پر ارشد کی بڑی بہن اور بہنوائی اس کے مکان پہنچے جہاں پر آواز دینے پر کسی قسم کا کوئی جواب نہیں آیا ۔ کھڑکی سے دیکھنے پر ساڑی کی مدد سے ٹین شیڈ کے پائپ کو پھانسی لگاکر لٹک رہا تھا جس پر دروازہ توڑکر اندر داخل ہوکر ارشد کو نیچے اتار کر سرکاری دواخانہ جگتیال منتقل کئے ۔ جہاں پر ڈاکٹروں نے ارشاد کو مردہ قرار دیا ۔ پولیس کو اطلاع دینے پر مقامی پولیس ایک مقدمہ درج رجسٹر کرنے کے بعد نعش کو بغرض پوسٹ مارٹم مردہ خانے میں محفوظ کردیا جہاں پر اس کے رشتہ داروں نے باکس میں رکھنے کیلئے باکس دینے کی خواہش پر نہیں دیا گیا ، جس کو اس حالت میں مردہ خانے میں ڈال دیا گیا جہاں پر رات میں نعش کو چوہوں نے اس کے چہرے کے گال اور ناک کو نوچ کر کھالیا جس کو صبح جب اس کے رشتہ داروں نے دیکھا تو احتجاج پر اتر آئے ۔ ایریا ہاسپٹل کی لاپرواہی اور ناقص کارکردگی پر سخت برہمی کا اظہار کیا ۔

TOPPOPULARRECENT