Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / ہائیکورٹ کی بی جے پی کارکن کی درخواست پر مرکز اور یو پی سے جواب طلبی

ہائیکورٹ کی بی جے پی کارکن کی درخواست پر مرکز اور یو پی سے جواب طلبی

الہ آباد ۔ 16 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) الہ آباد ہائیکورٹ نے آج مرکزی حکومت اور حکومت اترپردیش سے جواب طلبی کی۔ یہ نوئیڈا کے ایک بی جے پی کارکن کی درخواست پر کیا گیا ہے جس نے الزام عائد کیا کہ اسے جھوٹے مقدمہ میں پھنسایا گیا ہے۔ دادری میں بڑا گوشت کھانے کی افواہ پر ایک مسلم شخص کو زدوکوب کرتے ہوئے ہلاک کردیا گیا تھا۔ بی جے پی کارکن کو اس مقدمہ میں ملوث قرار دیا گیا ہے۔ کارکن نے مطالبہ کیا کہ اس معاملہ کی تحقیقات سی بی آئی کے حوالہ کی جائیں۔ الہ آباد ہائیکورٹ کی ایک ڈیویژن بنچ نے جو جسٹس بالا کرشنا نارائنا اور جسٹس ناہید آرا مونیس پر مشتمل تھی۔ مرکزی حکومت اور ریاستی حکومت سے جوابی حلف نامہ اندرون 4 ہفتہ داخل کرنے کی ہدایت دی۔ درخواست گذار کو حلف نامہ داخل کرنے کیلئے دو ہفتوں کی مہلت دی گئی۔ مقدمہ کی آئندہ سماعت 6 اپریل کو مقرر کی گئی ہے۔ یہ احکام بی جے پی کارکن سنجے سنگھ کی درخواست پر جاری کئے گئے ہیں جس نے ریاستی پولیس پر الزام عائد کیا ہیکہ معاملہ کی منصفانہ انداز میں تحقیقات نہیں کی گئی اور اسے زبردستی اس مقدمہ میں برسراقتدار سماج وادی پارٹی کی ایماء پر ملوث کیا گیا ہے۔ دادری زدوکوب کے ذریعہ ہلاک کردینے کا مقدمہ گذشتہ ستمبر سے جاری ہے۔ یہ واقعہ بیادا دیہات گوتم بدھ نگر میں پیش آیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT