Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / ہاسٹل طلبہ کے مسائل حل کرنے کا مطالبہ

ہاسٹل طلبہ کے مسائل حل کرنے کا مطالبہ

 

حیدرآباد۔ 21 اگست (این ایس ایس) پروگریسیو ڈیموکریٹک اسٹوڈنٹس یونین (پی ڈی ایس یو) کی جانب سے ریاستی حکومت سے سیلف مینجمنٹ ہاسٹلس اور ڈپارٹمنٹ اٹائچڈ ہاسٹلس کے مسائل کو حل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے 24 اگست کو کلکٹریٹس کا گھیراؤ کیا جائے گا۔ آج یہاں میڈیا سے مخاطب کرتے ہوئے یونین کے صدر جے سرینواس اور سیکریٹری کے ایس پردیپ نے کہا کہ تلنگانہ تحریک میں طلبہ نے اہم رول ادا کیا لیکن ریاست تلنگانہ کے قیام کے بعد طلبہ کے ساتھ سراسر ناانصافی کی جارہی ہے اور انہیں سنگین ناانصافی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ کے سی آر حکومت نے جس نے دو سال مکمل کئے ہیں، انتخابات سے قبل کئی تیقنات دیئے تھے لیکن قیمتوں میں اضافہ کے ساتھ طلبہ کے میس چارجیس میں اضافہ نہیں کیا۔ حکومت ، ڈگری اور پی جی کے طلبہ کو فی کس صرف 35 روپئے دے رہی ہے اور اس رقم سے تین میلس حاصل کرنا ممکن نہیں ہے۔ وزراء اور ارکان اسمبلی کی تنخواہوں میں بھاری اضافہ کا تذکرہ کرتے ہوئے پی ڈی ایس یو قائدین نے الزام عائد کیا کہ ٹی آر ایس حکومت ہاسٹلس طلبہ کی فلاح و بہبود پر توجہ دینے میں ناکام ہوگئی ہے۔ طلبہ کو کئی مسائل کا سامنا ہے کیونکہ حکومت ہاسٹلس کو خانگی عمارتوں میں چلا رہی ہے، جہاں کوئی طبی سہولتیں نہیں ہیں اور طلبہ بار بار بیمار ہورہے ہیں۔ پی ڈی ایس یو قائدین نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ میس چارجیس میں ماہانہ 2,500 روپئے تک اضافہ اور ہاسٹلس کیلئے ذاتی عمارتیں تعمیر کریں۔ انہوں نے حکومت کو یہ انتباہ بھی دیا کہ اگر حکومت ہاسٹل طلبہ کے مسائل کو حل نہ کرے تو وہ مرحلہ وار انداز میں احتجاجی دھرنا پروگرامس منظم کرنے کا انتباہ دیا۔ انہوں نے طلبہ کو کاسمیٹک چارجس کے طور پر ماہانہ 500 روپئے دینے کا بھی حکومت سے مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT