Saturday , August 19 2017
Home / Top Stories / ہریانہ میں تشدد ، 12 ہلاک ، 150 زخمی

ہریانہ میں تشدد ، 12 ہلاک ، 150 زخمی

مودی کا پتلا نذر آتش ،دہلی میں پانی کا سنگین بحران ، جاٹ برادری کے مطالبہ کا جائزہ لینے مرکزی کمیٹی کی تشکیل

چندی گڑھ / نئی دہلی ۔ /21 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) ہریانہ میں جاٹ طبقہ کے تحفظات کیلئے جاری احتجاج نے پرتشدد شکل اختیار کرلی اور مہلوکین کی تعداد بڑھ کر 12 ہوگئی جبکہ اب تک 150 سے زائد زخمی ہوئے ہیں ۔ ہریانہ کے ایڈیشنل چیف سکریٹری (داخلہ) پی کے داس نے کہا کہ اکبرپور ۔ بروٹا میں ایک شخص کی فائرنگ کے واقعہ میں ہلاکت واقع ہوئی جبکہ ہنسی کے مقام پر دو گروپس میں جھڑپ کے نتیجہ میں ایک شخص ہلاک ہوگیا ۔ انہوں نے کہا کہ حکام ابھی تک احتجاجیوں کو مناک نہر کا محاصرہ ختم کرنے کیلئے رضامند نہیں کرپائے جس کے ذریعہ دہلی کو پانی سربراہ کیا جاتا ہے ۔ قبل ازیں ڈی جی پی یشپال سنگھ نے کہا کہ اکبرپور ۔ بروٹا سے دہلی کیلئے پانی کی سربراہی کی بحالی اولین ترجیح ہے ۔ پولیس ، پیراملٹری فورسیس اور ہریانہ محکمہ آبپاشی کے ماہرین کی ایک ٹیم یہاں روانہ کی گئی لیکن احتجاجیوں کو محاصرہ ختم کرنے کیلئے رضامند نہیں کیا جاسکا ۔ بی جے پی نے رات دیر گئے سینئر مرکزی وزیر کی زیرقیادت پانچ رکنی کمیٹی قائم کرنے کا اعلان کیا جو جاٹ طبقہ کو کوٹہ فراہم کرنے کے مطالبہ کا جائزہ لے گی ۔ مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے دہلی میں کہا کہ مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو کی قیادت میں کمیٹی تشکیل دی جارہی ہے ۔

انہوں نے ہریانہ کی عوام سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کی ۔ احتجاج کے باعث پبلک ٹرانسپورٹ سسٹم درہم برہم ہوگیا ۔ ڈومیسٹک ایرلائینس نے یہاں سے چندی گڑھ ، امرتسر اور جئے پور کیلئے اضافی پروازیں چلائیں تاکہ پھنسے ہوئے افراد کو لے جایا جاسکے ۔ دہلی میں پانی کا سنگین بحران ہوگیا ہے جس کی وجہ سے حکومت نے کل تمام اسکولس بند رکھنے کا اعلان کیا ۔ چیف منسٹر اروند کجریوال کی زیرقیادت اعلیٰ سطحی ہنگامی اجلاس کے بعد عوام سے خواہش کی گئی ہے کہ وہ پانی کے استعمال میں احتیاط کریں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت دہلی اس بحران کے سلسلے میں مرکزی وزارت داخلہ اور ہریانہ کے عہدیداروں سے مسلسل ربط قائم رکھے ہوئے ہے ۔ مرکز نے قومی شاہراہوں پر رکاوٹیں دور کرنے اور ضروری خدمات کی بحالی کیلئے فوج کو ہریانہ کے مقامی انتظامیہ کی مدد کی ہدایت دی ہے ۔ فوج سے کہا گیا ہے کہ وہ قومی شاہراہوں کو دوبارہ بحال کرنے میں مدد کریں ۔ جاٹ احتجاجیوں نے آج غازی آباد میں مرکزی منسٹر آف اسٹیٹ امور خارجہ وی کے سنگھ کی رہائش گاہ کے روبرو وزیراعظم نریندر مودی کا پتلا نذر آتش کیا ۔احتجاج کی وجہ سے ٹریفک نظام درہم برہم ہوگیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT