Tuesday , October 24 2017
Home / Top Stories / ہریانہ میں 2دلت بچے زندہ نذر آتش

ہریانہ میں 2دلت بچے زندہ نذر آتش

فرید آباد( ہریانہ )۔/20اکٹوبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) دہلی کے مضافات میں کل شب محو خواب ایک دلت خاندان کے 2بچے زندہ جل گئے اور ان کے والدین شدید جھلس گئے جب اعلیٰ ذات کے بعض افراد نے ان کے مکان کو آگ لگادی۔ پولیس نے بتایا کہ یہ المناک واقعہ سونپیڈ گاؤں میں صبح کی اولین ساعتوں 2:30 بجے پیش آیا اور اس سلسلہ میں 2افراد کو گرفتار کرلیا گیا۔ پولیس ترجمان نے بتایا کہ 11افراد بشمول باپ بیٹے کے خلاف قتل اور فساد بھڑکانے اور دیگر الزامات کے تحت کیس درج کرلیا گیا ہے۔ حملہ آوروں نے دلت خاندان کے مکان میں کھڑکی سے پٹرول ڈال کر آگ لگادی تھی جس میں ڈیڑھ سالہ لڑکا ویئجو اور اس کی بہن 11ماہ کی دیویا زندہ جل گئے۔ اس واقعہ کے وقت قریب کے گاؤں میں ایک مذہبی پروگرام جاری تھا۔ مہلوک بچوں کی والدہ 28سالہ ریکھا کو شدید جھلسی ہوئی حالت میں دہلی کے ایک ہاسپٹل میں شریک کروایا گیا ہے جبکہ ان کے والد 31سالہ جتیندر بھی اپنے خاندان کو بچانے کی کوشش میں جھلس گیا ہے۔ دلت خاندان کے خلاف حملہ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے آج ٹیلی فون پر چیف منسٹر ہریانہ منوہر کھتر سے بات چیت کی اور ہر ایک شہری کی سلامتی اور مستقبل میں اس طرح کے واقعات کے اعادہ کی روک تھام کو یقینی بنانے کی ہدایت دی۔ مرکزی وزارت داخلہ نے اس واقعہ پر ریاستی حکومت سے ایک رپورٹ بھی طلب کی ہے۔

 

دریں اثناء سرکاری ذرائع نے بتایا کہ حکومت ہریانہ نے متاثرہ دلت خاندان کیلئے 10لاکھ روپئے کے معاوضہ کا اعلان کیا ہے۔ دلت خاندان کے سربراہ چندر نے الزام عائد کیا کہ حملہ آوروں کا تعلق راجپوت ذات سے ہے جن کے خلاف اکٹوبر میں ایک قتل کا کیس درج کئے جانے پر ان کے ساتھ بحث و تکرار ہوگئی تھی اور انتقامی جذبہ سے انہیں نشانہ بنایا گیا ہے۔ جتیندر نے مزید بتایا کہ کل شب جب وہ افراد خاندان کے ساتھ محو خواب ہوگئے تھے مکان کی کھڑکی سے پٹرول پھینکنے پر وہ بیدار ہوگئے میں اپنی بیوی کو جگانے کی کوشش میں تھا کہ آگ کے شعلے بھڑکنے لگے۔ جبکہ مکان کا دروازہ باہر سے بند کردیا گیا تھا اور دیکھتے ہی دیکھتے میری نظروں کے سامنے دو بچے زندہ جل گئے۔ اس وحشتناک واقعہ کے بعد گاؤں میں زبردست کشیدگی پھیل گئی۔ جہاں پر سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔ پولیس کمشنر فریدآباد مسٹر سبھاش یادو نے آج صبح گاؤں پہنچ کر صورتحال کا جائزہ لیا ۔ پولیس نے بتایا کہ سونپیڈ گاؤں کے مکین بلونت اور ان کے فرزند دھرم سنگھ 11ملزمین میں شامل ہیں جن کے خلاف کیس درج کیا گیا ہے اور اس سلسلہ میں دو افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔دریں اثناء ایس سی؍ ایس ٹی کمیشن کی ٹیم نے متاثرہ خاندان سے ملاقات کرکے انہیں فراہمی انصاف کا تیقن دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT