Friday , August 18 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ہریتا ہرم پروگرام میں بدعنوانی کی شکایت

ہریتا ہرم پروگرام میں بدعنوانی کی شکایت

بودھن /9 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) مجلس بلدیہ بودھن میں سرکاری پروگرام ہریتا ہرم ( سرسبز شاداب ) میں ہوئی مبینہ بدعنوانیوں کے تعلق سے بعض ارکان بلدیہ کا ایک وفد ضلع کلکٹر نظام آباد سے ملاقات کرتے ہوئے ہریتا ہرم پروگرام کیلئے مختص کردہ رقم سات لاکھ کا غلط استعمال کئے جانے کی کلکٹر کو شکایت پیش کی ۔ کلکٹر ڈاکٹر یوگیتا رانا کی ہدایت پر آر ڈی او بودھن مسٹر شیام پرساد نے کمشنر مسٹر دیویندر اور متعلقہ محکمہ کے عہدیدار کو اپنے دفتر طلب کرکے جانچ کا آغاز کردیا ۔ کمشنر دیویندر کے ساتھ آر ڈی او کی پیشی میں حاضر ہوئے شیکھر نے سات لاکھ روپیوں کے خرچ کے تعلق سے آر ڈی او کو واقف کرواتے ہوئے بتایا کہ ہریتا ہرم پروگرام کیلئے تین لاکھ بارہ ہزار روپئے سے خرچ کئے گئے اور شہر میں صاف صفائی کیلئے چلائی گئی خصوصی مہم پر چار لاکھ پچاس ہزار روپئے خرچ ہوئے اور سرکاری پروگرام بتکماں پر دو لاکھ روپئے خرچ ہوئے ۔ اس ضمن میں جمع خرچ کے تعلق سے حساب کتاب آر ڈی او کے سامنے پیش کئے ۔ آر ڈی او نے کمشنر بلدیہ کی طرف سے پیش کئے گئے ریکارڈس کا سرسری معائنہ کرنے کے بعد انہوں نے کمشنر بلدیہ سے دریافت کیا کہ کاموں کے آغاز سے قبل نوٹ فائل کیوں تحریر نہیں کیا گیا۔ ماہ اگست کے دوران ہریتا ہرم پروگرام کا شہر میں عملی طور پر آغاز کیا گیا لیکن کونسل سے ماہ ستمبر میں اجازت حاصل کی گئی اور ریکارڈس کے مطابق شہر میں تقریباً ایک ماہ تک بلاناغہ ہریتا ہرم پروگرام کیلئے مزدور کھڈے کھودتے رہے اور ان میں پودے لگائے گئے لیکن کتنے مزدوروں کی خدمات حاصل کی گئی اور کس ایجنسی سے مزدوروں کا تعلق تھا ریکارڈس میں کہیں بھی ٹھیک طرح تفصیلات درج نہیں ہیں ۔ مبینہ طور پر ریکارڈ میں کام کے ایام کے تاریخ درج نہیں کئے گئے ۔ آر ڈی او نے کہا کہ مجلس بلدیہ بودھن کے اکاونٹ سیکشن کی ذمہ داری ہے کہ بغیر صحیح ریکارڈس داخل کئے گئے بلس کی رقم جاری نہ کریں ـ آر ڈی او نے ریکارڈس کی مکمل جانچ کے بعد ضلع کلکٹر نظام آباد کو رپورٹس روانہ کرنے کا اعلان کیا۔

TOPPOPULARRECENT