Friday , September 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ہر گھر محفوظ پینے کے پانی کی فراہمی کیلئے منصوبہ بندی

ہر گھر محفوظ پینے کے پانی کی فراہمی کیلئے منصوبہ بندی

نظام آباد:21؍ اپریل (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )گھر گھر کو پینے کا پانی فراہم کرنے کیلئے مشن بھاگیرتا اسکیم کے تحت محفوظ پینے کا پانی فراہم کیا جارہا ہے۔ ان خیالات کا اظہار چیف منسٹر پیشی کے اڈیشنل سکریٹری سمیتا سبھروال نے کیا ۔ انہوں نے ضلع نظام آباد میں جاری مشن بھاگیرتا کے کاموں کا ضلع کلکٹر نظام آباد ڈاکٹر یوگیتا رانا، ضلع کلکٹر میدک رونالڈ روس کے ہمراہ میدک ضلع کے سنگور پراجیکٹ کے قریب پدا ریڈی پیٹا پر تعمیر کئے جانے والے ان ٹیک ویل، نظام آباد ضلع کے بالکنڈہ منڈل کے جلال پور کے قریب تعمیر کئے جانے والے پمپ پائوزکا معائنہ کیا۔ اس موقع پر سمیتا سبھروال نے بتایا کہ ریاستی حکومت ضلع نظا م آباد کے میونسپل کارپوریشن نظام آباد، کاماریڈی بلدیہ، بودھن آرمور بلدیہ کے علاوہ 1645 علاقوں کو پینے کے پانی مشن بھاگیرتا کے تحت گھر گھر پانی فراہم کرنے کیلئے منصوبہ بنایا ہے اور اس اسکیم کے تحت 5لاکھ مکانوں کو نل کنکشن فراہم کئے جارہے ہیں۔ نظام آباد ضلع کے ہر گھر میں پینے کا پانی سربراہ کرنے کیلئے 1300 کروڑ روپئے سے میدک ضلع کے سنگور پراجیکٹ پدی ریڈی پیٹا کے قریب ان ٹیک ویل واٹر گریٹ ٹریمٹنٹ پلانٹ، پمپنگ ویل تعمیر کیا جارہا ہے۔ سمیتا سبھروال نے بتایا کہ عالمی سطح پر جدید ٹکنالوجی کے استعمال کے ذریعہ مشن بھاگیرتا کی تعمیر عمل میں لائی جارہی ہے تاکہ بین الاقوامی سطح پر اس کی شناخت حاصل رہے اور وقت مقررہ پر ہر دیہات کو پینے کا پانی سربراہ کرنے کیلئے اہم کاموں کے علاوہ گھر گھر کو پانی سربراہ کرنے کیلئے پائپ لائن کی تعمیر بھی بیک وقت میں تعمیر کرنے کیلئے اقدامات کرنے کیلئے عہدیداروں کو ہدایت دی۔ کاموں کی انجام دہی میں معیار برتنے، پائپ لائن کی تعمیر مئی کے آخر تک مکمل کرنے، کسانوں کو کسی قسم کا نقصان پیش ہونے نہ دیں۔ پدی ریڈی کے پاس تعمیر کئے جانے والے واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ میں ہر روز 14 کروڑ 50لاکھ لیٹر پانی محفوظ کیا جاسکتا ہے اور یہاں سے 5.25 کلو میٹر دور واقع تڑا منور (میدک ضلع) 100 میٹر اونچائی پر پمپنگ کیا جائیگا۔ تڑا منور سے گراویٹی کے ذریعہ جکل، بانسواڑہ، بودھن حلقہ کے دیہاتوں کو اور بودھن بلدیہ یلاریڈی حلقہ کے چند دیہاتوں کو سنگورکا پانی سربراہ کیا جائیگا۔ جملہ 16 منڈلوں کے 785 علاقوں کو پانی سربراہ کرنے کا نشانہ مقرر کیا گیا ۔ 2017 جون تک 213 دیہاتوں اور ڈسمبر 2017 ء تک 512 دیہاتوں کو سنگور سے پانی سربراہ کیا جائیگا۔ ان کاموں کو تیزی کے ساتھ انجام دینے کیلئے ریاستی حکومت کی جانب سے مسلسل معائنہ کیا جارہا ہے۔ سمیتا سبھروال نے جلال پور پر تعمیر کئے جانے والے مشن بھاگیرتا کے کاموں کا جائزہ لیا اور کہا کہ یہاں3 واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ کی تعمیر کیلئے 1350 کروڑ روپئے خرچ کئے جارہے ہیں اور 14 کروڑ لیٹر پانی محفوظ کیا جاسکتا ہے۔ جلال پور ان ٹیک ویل کے ذریعہ ارگل کے پاس ہرروز 6 کروڑ لیٹراور اندلوائی پر 4 کروڑ لیٹر، ملنا گٹہ کے پاس 4 کروڑ لیٹر کیلئے ٹریٹمنٹ پلانٹ کے کام جاری ہے ۔ اس کے علاوہ یہاں پر تعمیر کئے گئے 3 کروڑ لیٹر کے 3 واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹس جلال پور پر تعمیر کئے جانے والے ان ٹیک ویل سے پانی سربراہ کیا جائیگا۔ جلال پور ان ٹیک ویل سے 20 منڈلوں کے 807مقامات کو پینے کا پانی سربراہ کیا جائیگا۔

TOPPOPULARRECENT