Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / ہسٹری آف حیدرآباد کتاب کی رسم اجراء

ہسٹری آف حیدرآباد کتاب کی رسم اجراء

حیدرآباد۔17مئی(سیاست نیوز)انگریزوں سے ہندوستان کی آزادی سے قبل ہی حیدرآباد کا دنیا کے ترقی یافتہ شہروں میںشمار تھااور شروع سے ہی حیدرآباد ہمہ لسانی تہذیب وتمدن کا مرکز رہا ہے اور آج بھی یہ سلسلہ جاری ہے اور یہی وجہہ ہے کہ ریاست تلنگانہ ایک ایسی ریاست ہے جہاں پر مختلف مادری زبانوں سے تعلق رکھنے والے اراکین پارلیمنٹ شہرحیدرآباد اور اس کے اطراف واکناف کے اضلاعوں سے منتخب ہوکر ایوان پارلیمنٹ میںنمائندگی کررہے ہیں۔انگریزی زبان میںتاریخ حیدرآباد پر لکھی گئی دنیا کی سب بڑی کتاب ’’ہسٹری آف حیدرآباد ‘‘ کی رسم اجرائی تقریب سے خطاب کے دوران رکن پارلیمنٹ چیوڑلہ کونڈا ویشویشو ار ریڈی ان خیالات کا اظہار کررہے تھے۔ برلا سائنس سنٹر میںایس این رائو کی لکھی کتاب کی رسم اجرائی تقریب سے ڈاکٹر کولیرو چرنجیوی‘ مسٹر ایم ویدا کمار‘ سی وٹھل رکن تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن‘ نواب نجف علی خان ‘ رونق یار خان‘اے پدماچاری ‘ جوپلی راجندرا ‘ سری رنگاچاری کے علاوہ تیگلہ رویندرا نے بھی مخاطب کیا۔ کونڈا ویشویشو ار ریڈی نے اپنے سلسلے خطاب کو جاری رکھتے ہوئے ایس این رائو کو تاریخ حیدرآباد پر دنیاکی سب سے بڑی کتاب تیار کرنے پر مبارکباد پیش کی ۔چیرمن تلنگانہ ریسورس سنٹر ایم ویدا کمار نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہندوستان میںسب سے پہلے روڈ اور ایئر ویز کے ساتھ ریلویز اور زیر زمین ڈرنیج نظام قائم کرنے کے لئے آرائش بلدہ ‘ نل کے ذریعہ پینے کے پانی کی مفت سربراہی کی سہولتیں آصف جاہی حکمرانوں نے ریاست حیدرآباد کی عوام کو مہیاکروائی تھی۔ انہوں نے کہاکہ شہر کی تعمیر اس خوبصورت انداز کی کہ آج بھی دنیابھر کے سیاح شہر حیدرآباد کے فن تعمیرات کامشاہدہ کرنے کے لئے آتے ہیں۔ ڈاکٹرچرنجیوی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ میںہندوستان نہیںحیدرآباد ی ہوں کیونکہ جب میںپیدا ہوا تھا اس وقت ریاست حیدرآباد ایک مختار مملکت تھی جبکہ ہندوستان بھر میںانگریزی کی حکمرانی ۔ انہوں نے مزیدکہاکہ حیدرآباد کی ترقی آج بھی قطب شاہی اور آصف جاہی حکمرانوں کی مرہون منت ہے ۔ انہوں نے سلطان محمد قلی قطب شاہ کے بعد آصف جاہ ششم اور ہشتم کی جدید سونچ کا بھی اس موقع پر ذکر کیا۔ انہوں نے کہاکہ ایس این رائو نے اپنی تاریخی کتاب میںقطب شاہی اور آصف جاہی حکمرانوں نے ان تمام کارناموں کوشامل کیاجس کی وجہہ سے آج حیدرآباد کو بین الاقوامی شہرت نصیب ہوئی ہے ۔انہوں نے کہاکہ یہ کتاب مہنگی ہے مگر ہر حیدرآباد کے گھر میںاس کتاب کاہونا ضروری ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT