Tuesday , August 22 2017
Home / Top Stories / ہلمند میں امریکی فضائی حملہ ، 16 افغان ملازمین پولیس ہلاک

ہلمند میں امریکی فضائی حملہ ، 16 افغان ملازمین پولیس ہلاک

طالبان کے قبضہ سے آزاد ٹاؤن کی صفائی کے دوران بدبختانہ واقعہ ، ناٹوکا اظہارافسوس
قندہار ۔ /22 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) افغان صوبہ ہلمند میں ایک امریکی فضائی حملے میں افغانستان کے 16 ملازمین پولیس ہلاک اور دیگر دو زخمی ہوگئے ۔ ہلمند پولیس کے ترجمان نے کہا کہ یہ واقعہ گزشتہ روز 5 بجے شام پیش آیا ۔ جب افغان سکیورٹی فورسیس اس علاقہ میں طالبان کے قبضہ سے آزاد کروائے گئے ایک گاؤں کی صفائی میں مصروف تھے ۔ ہلمند کے صوبائی گورنر کے ترجمان نے کہا کہ ’’امریکی فضائی حملے میں بشمول دو کمانڈرس 16 افغان پولیس ملازمین ہلاک ہوئے ہیں اور دیگر دو زخمی بھی ہوئے ہیں ‘‘ ۔ ہلمند کے صوبائی گورنر کے ترجمان عمر زورک نے امریکی فضائی حملے کی توثیق کرتے ہوئے ہلاکتوں کی تفصیلات بیان کی۔ یہ فضائی حملہ ہلمند کے ضلع گرشیک میں ہوا جہاں کے اکثر حصے طالبان کے زیر کنٹرول ہیں ۔ افغانستان میں ناٹو کے مشن نے ایک بیان جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ’’امریکی تعاون سے جاری (افغان سکیورٹی) (کارروائیوں کے دوران فضائی حملے کے نتیجہ میں دوست افغان فورسیس کے چند سپاہیوں کی موت واقع ہوئی ہے جو (سپاہی ) اس احاطہ میں جمع ہوئے تھے ۔ ‘‘ ناٹو کے بیان میں مزید کہا گیا کہ ’’اس بدبختانہ واقعہ سے متاثرہ خاندانوں سے ہم دلی تعزیت کا اظہار کرنا چاہتے ہیں ۔ اس واقعہ کی تحقیقات کی جائیں گے ‘‘ ۔ افغانستان میں متعینہ ناٹو اتحاد میں امریکہ ہی واحد بیرونی فوج نے جو فضائی حملے کیا کرتی ہے وزارت داخلہ کے کارگزار ترجمان نجیب دانش نے بھی مہلوکین کی تعداد بتائی ہے جو صوبائی عہدیداروں کی طرف سے بتائی گئی تعداد سے کم ہے ۔ دانش نے کہا کہ ’’(امریکی) فضائی حملے میں بدقسمتی سے چند افراد ہلاک ہوئے ہیں ۔ ہمیں موصولہ تعداد کے مطابق 12 افغان ملازمین پولیس شہید ہوئے ہیں اور کوئی زخمی نہیں ہوا ہے ‘‘ ۔ اس جنگ زدہ ملک میں افغان اور امریکی فضائی حملوں سے متعلق ایسے کئی واقعات پیش آتے رہے ہیں ۔ فبروری کے دوران سنگین امریکی فضائی حملے 18 افغان ہلاک ہوگئے تھے جن میں خواتین اور بچوں کی اکثریت تھی ۔ اکٹوبر 2015 ء میں لڑائی کے دوران ایک امریکی فضائی حملے کی زد میں ایک دواخانہ بھی آگیا تھا ۔ جہاں 42 افراد کی ہلاکتوں پر دنیا بھر میں مذمت کی گئی تھی ۔ اور بین الاقوامی سطح پر غم و غصہ کا اظہار کیا گیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT