Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / ’’ہمیں مارڈالو ہم مسلمان ہیں‘‘، گجرات میں احتجاجی مظاہرہ

’’ہمیں مارڈالو ہم مسلمان ہیں‘‘، گجرات میں احتجاجی مظاہرہ

AHMEDABAD, JULY 9 (UNI):- Muslim displays placards during a protest against a spate of violent attacks across the country targeting the country's minority, in Ahmadabad on Sunday. UNI PHOTO-110U

گاؤ دہشت گردوں کی جانب سے بیف کے مسئلہ پر مسلمانوں کو نشانہ بنانے کے خلاف احمد آباد میں شدیداحتجاج

احمد آباد ۔ /9 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) گاؤ دہشت گردوں کی جانب سے بیف کے مسئلہ پر بے قصور مسلمانوں کو نشانہ بنانے اور زدوکوب کے ذریعہ انہیں ہلاک کرنے کے خلاف احمد آباد میں شدید احتجاجی مظاہرہ کیا گیا ۔ شہر کے جھانسی کی رانی چوراہے کے قریب 19 تنظیموں کے اتحاد گجرات جن آندولن کی جانب سے احتجاجی مظاہرہ کی اپیل کی گئی تھی ۔ اس اپیل پر سینکڑوں عوام نے احتجاجی مظاہرہ میں حصہ لیتے ہوئے گاؤ دہشت گردی کے خلاف نعرے لگائے ۔ شدید گرمی اور رطوبت کے باوجود سینکڑوں افراد نے جن میں صنعتی مزدور ، ٹریڈ یونین قائدین ، وکلاء ، انسانی حقوق کے کارکن ، سوشیل ورکرس ، ماہرین تعلیم اور نوجوان شامل تھے ۔ اپنے ہاتھوں میں “Not in my Name” ’’نفرت ختم کردو خون مت بہاؤ‘‘ ڈیموکریسی میں مابکریسی‘‘ نہیں چلے گی ۔ مودی حکومت میں فاشزم کی علانیہ علامتیں ظاہر ہورہی ہیں ۔ عوام کے احتجاجی مجمع سے خطاب کرتے ہوئے جن سنگھرش منچ کے کنوینر نیرجھاری سنہا نے عوام پر زور دیا کہ وہ متحد ہوکر فاشسٹ طاقتوں کا مقابلہ کریں جو گاؤ رکھشک کے نام پر مسلمانوں اور دلتوں کو نشانہ بنارہے ہیں ان کے خلاف متحد ہوجائیں ۔ بعد ازاں اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے سابق آئی پی ایس آفیسر سے وکیل بننے والے راہول شرما نے کہا کہ انسانی زندگی کا کسی ذات یا مذہب سے تعلق نہیں ہوتا ۔ مذہب کے نام پر انسانیت کا قتل بڑھتا جارہا ہے ۔ گائے کے تحفظ کے نام پر معصوم انسانوں کا خون بہایا جارہا ہے ۔ ایسے لوگ مذمت کے لائق ہیں ۔ تمام ہندوستانیوں کو ان گاؤں دہشت گردوں کے خلاف یکجا ہونا چاہئیے ۔ میں بھی اس اتحاد کی حمایت کرتا ہوں ۔ سماجی کارکن اور ماہر تعلیم پروین مشرا نے کہا کہ اس طرح کے استعمال عوام میں بیداری پیدا کرنے کیلئے کئے جارہے ہیں ۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ ہندوستانی عوام میں نفرت کو ختم کیا جائے اور خون بہانا بند کیا جائے ۔ مشہور وکیل اور کارکن گریش پٹیل ، ماہر تعلیم گھنشام شاہ اور سابق چیف منسٹر سریش مہتا نے بھی اس احتجاج میں حصہ لیا ۔

 

TOPPOPULARRECENT