Saturday , June 24 2017
Home / شہر کی خبریں / ہندوستانیوں کے بنیادی حقوق کی حفاظت کیلئے دستور کے مطابق معلومات فراہمی کی ضرورت

ہندوستانیوں کے بنیادی حقوق کی حفاظت کیلئے دستور کے مطابق معلومات فراہمی کی ضرورت

پی جی کالج آف لاء عثمانیہ یونیورسٹی کی یوم دستور تقریب، جسٹس سبھاشن ریڈی و دیگر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 26 نومبر (سیاست نیوز) ہرہندوستانی شہری کے بنیاد ی حقوق کی حفاظت کے لئے دستور ہند کے آرٹیکل چہارم کے دفعات 43,44,51/Aکے متعلق عوام کو معلومات فراہم کرنے کی ضرورت ہے اور اس کے متعلق عوام میںشعور بیداری بھی پرنسپل آف اسٹیٹ پالیسی کا حصہ ہے۔66ویں یوم دستور تقاریب کے موقع پر جسٹس بی سبھاشن ریڈی معزز جسٹس لوک ایوکت برائے تلنگانہ آندھرا نے ان خیالات کا اظہار کیا۔پوسٹ گریجویٹس کالج آف لاء عثمانیہ یونیورسٹی کے زیر اہتمام ‘ پی سی ایل ‘ عثمانیہ یونیورسٹی سمینار حال میںمنعقدہ تقریب یوم دستور میںاعزازی مہمان کی حیثیت سے پروفیسر ایس رام چندرم ‘ وائس چانسلر عثمانیہ یونیورسٹی کے علاوہ پروفیسر وائی وشنو پریہ ڈین فیکلٹی آف لاء کالج عثمانیہ یونیورسٹی اور پروفیسر گالی ونود کمار پرنسپل پی ڈی سی ایل عثمانیہ یونیورسٹی نے شرکت کی۔ طلباء کی کثیرتعداد بھی اس موقع پر موجو دتھی۔اپنے سلسلے خطاب کو جاری رکھتے ہوئے جسٹس سبھاشن ریڈی نے کہاکہ یوم دستور کا جشن منانے سے زیادہ ہر شہری کے بنیادی حقوق کے متعلق بنائے گئے قوانین پر عمل آوری ضروری ہے۔انہوں نے کہاکہ آرٹیکل چار کے مذکورہ دفعات پر عمل آوری کو یقینی بنانے تک شہریوں کو بنیادی حقوق کی فراہمی ممکن نہیں ہے۔انہوں نے اس کے متعلق شعور بیداری مہم کو ضروری قراردیا او رکہاکہ سماجی تنظیمیں او رسیاسی جماعتو ں کو بھی اس کام میںآگے آنے کی ضرورت ہے۔وائس چانسلر عثمانیہ یونیورسٹی رام چندرم نے کہاکہ انصاف میںتاخیر اور انصاف نظر انداز ہونے کی وجہہ سے شہریوں کے بنیادی حقوق متاثر ہورہے ہیں۔ انہو ںنے اس موقع پر پی جی لاء کالج بشیر باغ کی عمارت کی تزین نو اور آہک پاشی کے لئے رقم جاری کرنے اور یہاں پر بین الاقوامی لاء سمینار منعقد کرنے کا بھی اعلان کیا۔انہوں نے مزیدکہاکہ لاء کے متعلق ایک نمائش بھی منعقد کی جائے گی تاکہ طلبہ کو سیکھنے کا مزید موقع مل سکے۔ پروفیسر گالی ونود کمار نے اپنی تقریر میںنوٹوں کی تنسیخ کے اعلان کے طریقہ کار کو غیرقانونی قراردیتے ہوئے مرکزی حکومت کے فیصلے کی سختی کے ساتھ مذمت کی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT