Thursday , September 21 2017
Home / عرب دنیا / ہندوستانی جیویلرس نے ایک کیلو وزنی سونے کا جھمکا تیار کیا

ہندوستانی جیویلرس نے ایک کیلو وزنی سونے کا جھمکا تیار کیا

دوبئی ۔ 11 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) برسوں پہلے ایک ہندی فلم میرا سایہ کا گانا ’’جھمکا گرا رے بریلی کے بازار میں‘‘ بیحد مقبول ہوا تھا لیکن آج ہم جس جھمکے کی بات کرنے جارہے ہیں وہ بریلی کا نہیں بلکہ دوبئی کا ہے اور اتنا وزن دار ہے کہ اسے کوئی اپنے کانوں میں پہننے کی جسارت نہیں کرسکتا۔ ہندوستان کی ایک جویلری کمپنی نے ایک کیلو وزنی سونے کے جھمکے تیار کئے ہیں جن کی قیمت 36 لاکھ روپئے ہے۔ حالانکہ کمپنی کا مقصد محض ایک ریکارڈ قائم کرنا ہے۔ ہندوستانی کمپنی جی آر ٹی جویلرس کے مینجنگ ڈائرکٹر جی آر آنند اننت پدمانابھیم نے بتایا کہ جھمکا روایتی ہندوستانی انداز میں تیار کیا گیا ہے جو 22 قیراط کا ہے جسے سٹی آف گولڈ کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے تیار کیا گیا ہے۔ دوبئی یعنی سٹی آف گولڈ کو ہم کسی نہ کسی طرح یعنی کسی خصوصی زیور کی تیاری سے مرعوب کرنا چاہتے ہے۔ خلیج ٹائمز سے گفتگو کرتے ہوئے مسٹر آنند نے یہ بات کہی۔ جھمکے دیکھنے پر ایسا معلوم ہوتا ہے جیسے وہ کوئی چھوٹی سائز کے فانوس ہوں۔ اس کی ایک جھلک دیکھنے کیلئے لوگوں کا تناتا بندھا ہوا ہے جس کا افتتاح جنوبی ہند کی مشہور اداکارہ نین تارا کے ہاتھوں عمل میں آیا۔ جھمکے ایک تا دو فٹ لمبے ہیں اور شاید کوئی بھی گاہک (خاتون) اسے پہننے کی جسارت نہیں کرسکے گا جسے دنیا کا سب سے بڑا جھمکا بھی تصور کیا جارہا ہے۔ مسٹر آنند نے کہا کہ جھمکے دراصل ’’کلکٹرس پیس‘‘ یعنی نادر و نایاب اشیاء جمع کرنے والوں کیلئے بہتر ہیں۔ کمپنی اس بات کی خواہاں ہے کہ دنیا کا سب سے بڑا جھمکا تیار کرنے والی فرم کی حیثیت سے اس کا نام گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈس میں شامل ہو جس کے لئے درخواست دینے پر غوروخوض جاری ہے۔

TOPPOPULARRECENT