Saturday , September 23 2017
Home / پاکستان / ہندوستانی سرحدکے علاقوں میں طالبان کا حملوں کا منصوبہ

ہندوستانی سرحدکے علاقوں میں طالبان کا حملوں کا منصوبہ

پاکستانی انسداد دہشت گردی ایجنسی نے الرٹ جاری کئے ۔ سخت چوکسی کی ہدایت
لاہور 12 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان کی انسداد دہشت گردی ایجنسی نے دو الرٹس جاری کئے ہیں اور دو طالبان خود کش بمباروں کی جانب سے ہندوستان سے ملنے والی واگھا اور گنڈا سنگھ سرحدات پر حملوں کے اندیشے ظاہر کئے ہیں۔ یہ حملے یوم آزادی کے موقع پر ہوسکتے ہیں۔ قومی انسداد دہشت گردی اتھاریٹی نے پنجاب کے ڈائرکٹر جنرل پاکستان رینجرس ‘ محکمہ داخلہ اور پنجاب پولیس سربراہ سے کہا ہے کہ وہ عوام اور سکیوریٹی اہلکاروں کی حفاظت کیلئے سخت احتیاطی اقدامات کریں۔ سکیوریٹی الرٹ میں کہا گیا ہے کہ تحریک طالبان فضل اللہ گروپ کی جانب سے لاہور میں واگھا سرحد پر اور قصور میں گنڈا سنگھ سرحد پر 13 , 14 یا 15 اگسٹ کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے ۔ اس الرٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ان مقامات کو نشانہ بنانے دو خود کش بمباروں کو روانہ کیا گیا ہے ۔

کہا گیا ہے کہ سخت چوکسی اور سکیوریٹی انتظامات کرتے ہوئے کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کو ٹالا جانا چاہئے ۔ پنجاب کے محکمہ داخلہ نے بھی ایک علیحدہ الرٹ جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ کم از کم 16 خود کش حملہ آوروں کا صوبہ پنجاب میں داخلہ ہوا ہے جو یوم آزادی کے سلسلہ میں عوامی اجتماعات کو نشانہ بنانے کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ ان الرٹس کے بعد پنجاب پولیس نے سرحدی علاقوں میں تلاشیاں شروع کردی ہے اور کئی مشتبہ افراد کو حراست میں لے لیا ہے ۔ لاہور پولیس کے ترجمان نایاب حیدر نے کہا کہ پولیس نے زائد از 50 مشتبہ افراد کو حراست میں لیا ہے اور شہر اور سرحدی علاقوں میں سکیوریٹی سخت کی جا رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مشتبہ افراد کو حراست میں رکھتے ہوئے پوچھ تاچھ کی جائیگی تاکہ ان کی شناخت ہوسکے کیونکہ یہ لوگ ابھی تک اپنی شناخت سے متعلق دستاویز پیش نہیں کرسکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے یوم آزادی ( 14 اگسٹ ) کے موقع پر پولیس اہلکاروں کو بھی سرحدی علاقوں میں متعین کیا گیا ہے ۔ پاکستان رینجرس کی جانب سے بھی سرحدی علاقوں میں اپنی پٹرولنگ اور چوکسی میں اضافہ کردیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT