Monday , June 26 2017
Home / کھیل کی خبریں / ہندوستانی ٹیم کی چمپیئنزٹرافی میں شرکت پرہنوز سوالیہ نشان

ہندوستانی ٹیم کی چمپیئنزٹرافی میں شرکت پرہنوز سوالیہ نشان

ممبئی۔  26اپریل (سیاست ڈاٹ کام ) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل(آئی سی سی) کے زیر اہتمام ہونے والی چیمپئنز ٹرافی میں شرکت کرنے کے لئے  اسکواڈ کے اعلان کی آخری تاریخ ختم ہونے کے باوجود ہندوستان نے اپنی ٹیم کا اعلان نہیں کیا ہے۔تفصیلات کے مطابق چیمپئنز ٹرافی کے لئے ٹیم کا اعلان کرنے کی آخری تاریخ 25 اپریل رات 12 بجے تک تھی تاہم ہندوستان نے ٹیم کا اعلان نہیں کیا۔بی سی سی آئی کا آمدنی میں معقول حصہ لینے کے لئے آئی سی سی سے تنازعہ چل رہا ہے اور اس  نے چیمپئنز ٹرافی کا بائیکاٹ کرنے کا امکان بھی مسترد نہیں کیا ہے۔ آئی سی سی کے چیئرمین ششناک منوہر خود بھی ہندوستان، انگلینڈ اور آسٹریلیا پر مشتمل بگ تھری نظام کے سخت خلاف ہیں۔ ہندوستان، انگلینڈ اور آسٹریلیا نے 2014 میں آئی سی سی میں ’بگ تھری نظام‘ نافذ کیا تھا جس کے تحت تینوں ملکوں کو کرکٹ کا مالی اور انتظامی کنٹرول مل گیا تھا۔ویب سائٹ کرک انفو کی رپورٹ کے بموجب اس ماڈل کے مطابق آئندہ 8 برس تک آئی سی سی کو ہونے والی کل آمدنی کا 27.4 فیصد حصہ ہندوستان،آسٹریلیا اور انگلینڈ میں تقسیم ہونا تھا جس میں سب سے زیادہ حصہ 20.3 فیصد ہندوستان ، 4.4 فیصد انگلینڈ اور 2.7 فیصد آسٹریلیا کو ملنا تھا۔تاہم رواں برس فروری میں آئی سی سی نے اپنے 2014 کے فیصلے کو واپس لے لیا اور نیا گورننس اور ریوینیو کی تقسیم کا ماڈل پیش کیا تھا لیکن ہندوستان اس پر سخت ناراض ہے اور اس نئے ماڈل کو تسلیم نہیں کرتا۔اس سلسلے میں ہندوستان کے خدشات کو دور کرنے اور بگ تھری کا تنازعہ نمٹانے کے لئے دبئی میں آئی سی سی کا اجلاس26 سے 27 اپریل تک ہورہا ہے۔

رپورٹس کے مطابق ہندوستان کا مطالبہ ہے کہ اسے کرکٹ سے ہونے والی آمدنی کا مخصوص حصہ دے دیا جائے تو بگ تھری ختم کرنے پر اسے کوئی اعتراض نہیں۔ہندوستان کا دعویٰ ہے کہ آئی سی سی کو قومی ٹیم کی وجہ سے سب سے زیادہ آمدنی ہوتی ہے کیوں کہ ہندوستان کی آبادی بہت زیادہ ہے اور زیادہ تر اسپانسرز بھی ہندوستان ہی کی وجہ سے پیسہ لگاتے ہیں۔اب ہندوستان کی جانب سے چیمپئنز ٹرافی کے لئے اسکواڈ کا اعلان نہ کرنے کو بعض حلقے آئی سی سی پر دباؤ بڑھانے کی کوشش قرار دے رہے ہیں تاکہ وہ بی سی آئی سے معاہدہ کرلے۔ تاہم  میڈیا کے بموجب اگر مذاکرات ناکام ہوئے تو بھی ہندوستان کی جانب سے چیمپئنز ٹرافی کا بائیکاٹ ایک خطرناک فیصلہ ہوگا۔ سپریم کورٹ کی جانب سے قائم کردہ بورڈ کے معاملات دیکھنے والی کمیٹی کے سربراہ ونود رائے نے کہا ہے کہ اس سلسلے میں مذاکرات جاری ہیں۔ رکن ممالک کی شرکت کے معاہدے (ایم پی اے) کے تحت چیمپئنز ٹرافی کے لئے اسکواڈ کے اعلان کی آخری تاریخ 25 اپریل رات 12 بجے تک تھی تاہم اس معاہدے میں پابندیوں یا جرمانوں کا کوئی تذکرہ نہیں ہے۔ واضح رہے کہ ہندوستان نے 2013  چیمپئنز ٹرافی اپنے نام کی تھی اور اس کی عدم شرکت سے ٹورنمنٹ کو شدید دھکہ لگ سکتا ہے۔کرک انفو کے مطابق آئی سی سی کے چیئرمین ششناک منوہر نے اجلاس کے دوران پیشکش کی ہے وہ ہندوستان کے موجودہ حصص میں 10 کروڑ ڈالر اضافہ کرنے کے لئے تیار ہیں تاہم ہندوستان نے یہ پیشکش قبول کی یا نہیں یہ واضح نہیں۔ چیمپیئنز ٹرافی کا انعقاد انگلینڈ میں یکم تا 18 جون منعقد ہوگی جس میں 8 ٹیموں کو دو گروپس میں تقسیم کیا گیا ہے۔ ہندوستانی ٹیم گروپ بی میں پاکستان، سری لنکا اور جنوبی افریقہ کے ساتھ موجود ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT