Tuesday , September 19 2017
Home / Top Stories / ہندوستان اور چین باہمی تعاون میں اضافہ اور اختلافات کم کریں

ہندوستان اور چین باہمی تعاون میں اضافہ اور اختلافات کم کریں

The President, Shri Pranab Mukherjee being received by the Vice Governor of Guangdong, Mr. Zhongyou and the Vice Minister, Mr. Liu Zhenmin on his arrival, at Guangzhou, China on May 24, 2016.

صدرجمہوریہ پرنب مکرجی کا بندرگاہی شہر گوانگزومیں ہندوستانی برادری سے خطاب ، چین کے ہم منصب سے ملاقات کریں گے

بیجنگ ۔ 24 مئی (سیاست ڈاٹ کام) صدرجمہوریہ پرنب مکرجی 4 روزہ دورہ پر آج چین کے جنوبی بندرگاہی شہر گوانگزو پہونچے ۔ اس موقع پر انہوں نے دونوں ممالک کے مابین مختلف شعبوں میں باہمی تعاون میں اضافہ اور اختلافات کم کرنے کی ضرورت پر زور دیا ۔ انہوں نے یہاں ہندوستانی شہریوں کی جانب سے منعقدہ استقبالیہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہندوستان اور چین کے 2.5 بلین افراد متحدہ ہوجائیں تو یہ انتہائی اہم واقعہ ہوگا ۔ چین میں اس وقت تقریباً 45 ہزار ہندوستانی ہے اور وہ ملک کی ترقی میں نمایاں رول ادا کررہے ہیں ۔ صدرجمہوریہ ہند چار روزہ سرکاری دورہ پر آج چین پہنچ گئے۔ این ایس جی کی ہندوستان کو رکنیت اور جیش محمد کے سربراہ مسعود اظہر پر امتناع عائد کرنے کی اقوام متحدہ کی قرارداد کو سلامتی کونسل میں چین کی جانب سے مسترد کردیئے جانے کی بناء پر ہند ۔ چین تعلقات میں کشیدگی پیدا ہوگئی ہے۔ مکرجی کا بحیثیت صدر یہ اولین دورۂ چین ہے۔ وہ مختلف حیثیتوں بشمول نائب صدرنشین منصوبہ بندی کمیشن اور وزیر دفاع، چین کے ماضی میں کئی دورے کرچکے ہیں۔ چین کے صنعتی شہر گوانگ ژاؤ میں صدر پرنب مکرجی ہند ۔ چین بزنس فورم سے خطاب کریں گے۔ وہ جمعرات کے دن چین کے دارالحکومت بیجنگ پہنچیں گے۔

صدر چین ژی جن پنگ اور دیگر چینی قائدین سے ان کی ملاقاتیں مقرر ہیں جن میں وزیراعظم لی کیتیانگ اور صدرنشین نیشنل پیپلز کانگریس ژانگ ڈی ژیانگ بھی شامل ہیں۔ چینی قیادت سے بات چیت کے موضوعات میں نیوکلیر سربراہ کنندہ گروپ (این ایس جی) کی ہندوستان کو رکنیت اور مولانا مسعود اظہر پر اقوام متحدہ کی تجویز پر چین کے ذہنی تحفظات شامل ہیں۔ جن کی وجہ سے ہند ۔ چین تعلقات کشیدہ ہوگئے ہیں۔ چین کا مطالبہ ہے کہ این ایس جی کی رکنیت سے قبل ہندوستان کو نیوکلیر عدم پھیلاؤ معاہدہ پر دستخط کرنے چاہئیں۔ اس کی مخالفت کرتے ہوئے ہندوستان اسے ’’اُلجھن انگیز‘‘ قرار دیا ہے۔ صدرجمہوریہ کے ہمراہ چین کے دورہ میں مرکزی وزیر ٹیکسٹائیلس سنتوش گنگور، چار ارکان پارلیمنٹ اور معتمد خارجہ ایس جئے شنکر پر مشتمل وفد ہے۔ جمعرات کے دن صدر ژی جن پنگ سے ملاقات کے دوران باہمی دلچسپی کے ہند ۔ چین مسائل سرحدی تنازعہ اور مسائل کی یکسوئی کے لئے جاریہ نظام چینی قیادت سے صدرجمہوریہ کی بات چیت کے اہم موضوعات ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT