Monday , August 21 2017
Home / ہندوستان / ہندوستان اور یو اے ای کے مابین 16 معاہدوں پر دستخط متوقع

ہندوستان اور یو اے ای کے مابین 16 معاہدوں پر دستخط متوقع

نئی دہلی۔ 8 فروری (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان اور متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کے مابین مختلف شعبوں جیسے نیوکلیئر توانائی، تیل، آئی ٹی، ایرواسپیس اور ریلویز میں تقریباً 16 معاہدوں پر دستخط ہوں گے جس کے نتیجہ میں ہندوستان نے یو اے ای کی سرمایہ کاری میں غیرمعمولی اضافہ کا امکان ہے۔ ابوظہبی کے ولیعہد محمد بن زید النیہان کے چہارشنبہ سے شروع ہورہے سہ روزہ دورہ کے موقع پر ان معاہدوں پر دستخط کئے جائیں گے۔ انتہا پسندی سے نمٹنے، انسداد دہشت گردی تعاون اور اسلامک اسٹیٹ (آئی ایس) پر قابو پانے جیسے موضوعات بھی زیربحث آئیں گے۔ شیخ محمد بن زید النیہان کی جمعرات کو وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات ہوگی۔ یو اے ای کے سفیر احمد البناء نے آج یہ بات بتائی۔ انہوں نے کہا کہ یو اے ای کی بااثر شخصیت کا دورہ ایسے وقت ہورہا ہے جبکہ 6 ماہ قبل وزیراعظم نریندر مودی وہاں جا چکے ہیں۔ اس سے دونوں ممالک کے مابین معاشی روابط کو مزید استحکام ملے گا۔ ابوظہبی جو یو اے ای کا دارالحکومت ہے، اس کے پاس تقریباً 800 بلین ڈالرس کا ویلتھ فنڈ ہے۔ ہندوستان کی نظریں ابوظہبی انویسٹمنٹ اتھاریٹی پر مرکوز ہے تاکہ انفراسٹرکچر شعبہ میں سرمایہ کاری کو راغب کیا جاسکے۔ النیہان کے دورہ کے موقع پر اس ضمن میں بعض اعلانات متوقع ہے۔ انہوں نے کہا کہ فی الحال مختلف وزارتوں اور عہدیداروں کے ساتھ 16 معاہدوں کو قطعیت دی جاچکی ہے۔ توقع ہے کہ ان تمام پر دستخط ہوگی۔ یو اے ای سفیر نے کہا کہ ان معاہدوں کی نتیجہ میں مختلف شعبوں بشمول تجدیدی توانائی، تیل اور گیاس وغیرہ میں بھاری سرمایہ کاری ہوگی۔ نیوکلیئر تعاون معاہدہ کے ذریعہ جوہری توانائی کے پرامن اغراض کیلئے استعمال کی راہ ہموار ہوگی۔ یو اے ای نے اسی طرز کا معاہدہ فرانس اور دیگر چند ممالک کے ساتھ بھی کیا ہے۔ ہندوستان کو یو اے ای کا نمبر ایک تجارتی پارٹنر تصور کیا جاتا ہے اور یہاں سالانہ تجارت تقریباً 60 بلین ڈالرس کی ہے۔ یو اے ای کو خلیج میں بھی نمایاں اہمیت حاصل ہے اور یہ ہندوستان کیلئے خصوصیت رکھتا ہے۔ یو اے ای میں تقریباً 2.6 ملین ہندوستانی ہے جو وہاں کی آبادی کا 30% ہیں۔ اس کے علاوہ 2014-15ء میں یو اے ای ، ہندوستان کو کروڈ آئیل سربراہ کرنے کا چھٹا ملک تھا۔ البناء نے کہا کہ نریندر مودی نے تقریباً 34 سال کے وقفہ کے بعد یو اے ای کا دورہ کیا جس سے باہمی روابط کو مستحکم بنانے کیلئے نئی راہیں ہموار ہوسکیں اور النیہان کے دورہ سے یہ تعلقات مزید مستحکم ہوں گے۔ دہشت گردی کو ساری دنیا کیلئے ایک سنگین خطرہ تصور کرتے ہوئے ہندوستان اور یو اے ای سکیورٹی اقدامات میں اضافہ کررہے ہیں اور اس لعنت سے نمٹنے کیلئے انسداد دہشت گردی تعاون کو فروغ دیا جارہا ہے۔ انتہا پسندی سے نمٹنے کا حوالہ دیتے ہوئے  انہوں نے کہا کہ ہندوستان اور یو اے ای مل کر کام کریں گے۔ ابوظہبی کے ولیعہد ، صدر جمہوریہ پرنب مکرجی سے بھی ملاقات کریں گے۔ آئی ایس کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس سے نمٹنے کیلئے تعاون یقینی بنایا جائے گا اور سوشیل میڈیا ایک بڑے پلیٹ فارم کا رول ادا کررہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT