Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / ہندوستان ‘ علاقہ کا امن غیر یقینی بنا رہا ہے ‘ پاکستان کا الزام

ہندوستان ‘ علاقہ کا امن غیر یقینی بنا رہا ہے ‘ پاکستان کا الزام

ہم کشمیر پر بات کرنے تیار ۔ پاکستان یوم جمہوریہ کے موقع پر صدر ممنون حسین کا خطاب
اسلام آباد 23 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) مسئلہ کشمیر کو تقسیم کا غیر مختتم اجنڈہ قرار دیتے ہوئے پاکستان کے صدر ممنون حسین نے آج ہندوستان پر الزام عائد کیا کہ وہ مسلسل جنگ بندی خلاف ورزیوں کے ذریعہ علاقہ میں امن کو غیر یقینی بنا رہا ہے ۔ سالانہ یوم جمہوریہ ملٹری پریڈ سے خطاب کرتے ہوئے ممنون حسین نے کہا کہ پاکستان ‘ ہندوستان کے ساتھ بات چیت کیلئے تیار ہے اور وہ چاہتا ہے کہ مسئلہ کشمیر کو حل کیا جائے ۔ یہ تقسیم کا ایک غیر مختتم ایجنڈہ ہے ۔ اس فوجی پریڈ میں پہلی مرتبہ چین اور سعودی عرب کی افواج نے بھی حصہ لیا ۔ ممنون حسین نے کہا کہ ہم چاہتی ہے کہ ساری دنیا کے ستاھ دوستی قائم ہو اور خاص طور پر پڑوسی ممالک سے دوستی بنی رہے ۔ تاہم ہندوستان کا غیر ذمہ دارانہ رویہ اور لائین آف کنٹرول پر مسلسل خلاف ورزیوں نے علاقہ کے امن کو غیر یقینی کیفیت سے دوچار کردیا ہے ۔ اس پریڈ میں پاکستان کے اپنے طور پر تیار کردہ ائر ڈیفنس سسٹم اور میزائیلس کو پیش کیا گیا ۔ ممنون حسین نے کہا کہ پاکستان کا دفاع ناقابل تسخیر ہے اور اس کی نیوکلئیر صلاحیتیں عالمی اور علاقائی امن کو یقینی بنانے کیلئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کا ملک علاقہ میں طاقتور معیشت بن کر ابھر رہا ہے ۔ اس پریڈ میں پہلی مرتبہ چین اور سعودی عرب کی افواج نے بھی شرکت کی ۔ اس کے علاوہ ترکی کے فوجی بیانڈ ’ میہر ‘ نے بھی شرکت کی ۔ پریڈ میں پاکستان نے اپنی فوجی صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا ۔ اس میں F-16 ‘ JF -17 طیارے ‘ میراج ‘ اواکس تیارے اور دوسرے فوجی سامان کو پیش کیا گیا ۔ ممنون حسین کے علاوہ وزیر اعظم نواز شریف ‘ وفاقی وزرا ‘ سیاست دان ‘ سفارتکار ‘ صدر نشین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی اور تینوں مسلح افواج کے سربراہان نے بھی پریڈ میں شرکت کی ۔ پاکستان کی تین افواج کی ریجمنٹس ‘ رینجرس ‘ پولیس اور کمانڈوز نے فوجی پریڈ کے دوران مارچ کیا ۔ یہاں کسی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے خصوصی سکیوریٹی انتظامات بھی کئے گئے تھے ۔ موبائیل ٹیلیفون خدمات کو معطل کردیا گیا تھا اور اس مقام تک پہونچنے والے راستوں پر کڑے انتظامات کئے گئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT