Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / ہندوستان میںکئی امریکی کمپنیاں منافع کمارہی ہیں

ہندوستان میںکئی امریکی کمپنیاں منافع کمارہی ہیں

ویزا قواعد میں سختی پر وزیر کامرس نرملا سیتارامن کا ’’ جیسے کو تیسا‘‘ردعمل

نئی دہلی ۔ /20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) امریکی ویزا قواعد سخت ہونے کی بنا ہندوستانی کمپنیوں کے متاثر ہونے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مرکزی وزیر کامرس نرملا سیتارامن نے آج کہا کہ اس بحث کو وسعت دینے کی ضرورت ہے اور ایسی کئی امریکی فرمس کو بھی شامل کیا جائے جو ہندوستان میں منافع کمارہی ہیں ۔ ان کا یہ تبصرہ ہندوستانی کمپنیوں بالخصوص آئی ٹی خدمات فراہم کرنے والوں کی تشویش کے پس منظر میں اہمیت رکھتا ہے ۔ نرملا سیتارامن نے کہا کہ ہمیں یہ بات یاد رکھنی چاہئیے کہ صرف ہندوستانی کمپنیاں ہی امریکہ میں نہیں ہے ۔ کئی بڑی امریکی کمپنیاں بھی ہندوستان میں موجود ہیں ۔ وہ ہندوستان میں رہتے ہوئے کافی منافع کمارہی ہیں ۔ ان کی آمدنی اور منافع امریکی معیشت کا حصہ بن جاتا ہے ۔ لہذا ایسی صورتحال میں جب امریکی عاملہ حکم کی بنا ہندوستانی کمپنیاں یکرطفہ طور پر متاثر ہوسکتی ہیں تو پھر ہندوستان میں کئی امریکی کمپنیوں کے بارے میں جو منافع کمارہی ہیں ، غور کیا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس بحث کو وسعت دینی چاہئیے اور ان تمام پہلووں کا احاطہ کیا جانا چاہئیے ۔ انہوں نے کہا کہ ترقیاتی ممالک اب واضح طور پر حفاظتی دیوار اٹھارہے ہیں ۔ اس ضمن میں انہوں نے امریکہ  ، برطانیہ ، آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کی مثال دی جنہوں نے باصلاحیت پروفیشنلس کیلئے ویزا قواعد سخت کردیئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ کئی ممالک اب واضح طور پر خدمات کے شعبہ میں حفاظتی دیوار بلند کررہے ہیں ۔ اب وقت آچکا ہے کہ اس ضمن میں ایک عالمی طریقہ کار ہونا چاہئیے ۔ ہم ورلڈ ٹریڈآرگنائزیشن میں اپنی یہ تجویز پیش کریں گے ۔
H1-B تجارتی مسئلہ
ٹرمپ انتظامیہ سے رجوع ہونے کا اشارہ
اس دوران وزارت امور خارجہ کے ترجمان گوپال باگلے نے کہا کہ H1-B ویزا قواعد میں سختی پر ہندوستان کڑی نظر رکھے ہوئے ہے ۔ کیونکہ ہندوستانی آئی ٹی انڈسٹری اور پروفیشنلس پر اس کا زیادہ اثر ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ ہم یہ مسئلہ ٹرمپ انتظامیہ سے رجوع کریں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ H1-B ایک تجارتی اور خدمات سے متعلق مسئلہ ہیے ۔ یہ تارکین وطن کا مسئلہ نہیں ہے ۔ اس سے دونوں ممالک کے باہمی مفادات وابستہ ہیں ۔ ان کا اشارہ ہندوستان میں واقع امریکی آئی ٹی کمپنیوں میں کثیر تعداد میں کام کررہے امریکی پروفیشنلس کی طرف تھا ۔

TOPPOPULARRECENT