Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ہندوستان میں اب F-16 طیاروں کی تیاری

ہندوستان میں اب F-16 طیاروں کی تیاری

ٹاٹا سے معاہدے کے بعد میک ان انڈیا اسکیم کو بڑی کامیابی حاصل
حیدرآباد۔20جون(سیاست نیوز) ہندستان میں اب F-16طیارے بنائیں جائیں گے۔ F-16لڑاکا طیاروں کے تیارکنندگان کے ٹاٹا سے کئے گئے معاہدے کے بعد مرکزی حکومت کی ’’میک ان انڈیا ‘‘ اسکیم کو بڑی کامیابی حاصل ہونے کی توقع ہے۔ باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق ٹاٹا اڈوانس سسٹم اور لاک ہیڈ مارٹن کی جانب سے کئے گئے معاہدہ کے بعد بتایا جاتا ہے کہ F-16کی تیاری کیلئے پلانٹ کا آغاز شروع کیا جائے گا اور قوی امکان ہے کہ ٹاٹا اس پراجکٹ کو حیدرآباد کے نواحی علاقہ مہیشورم میں موجود ہیلی کاپٹر سازی کے مقام پر ہی اس نئے پراجکٹ کا آغاز کرسکتا ہے ۔ امریکی کمپنی لاک ہیڈ مارٹن کے بموجب حکومت ہند کی جانب سے میک ان انڈیا کے منصوبہ سے متاثر ہوتے ہوئے اور ٹاٹا کمپنی کی جانب سے تیار کئے جانے والے معیاری طیاروں کو دیکھتے ہوئے F-16کی تیاری کا معاہدہ کیا ہے ۔ ماہرین کے بموجب یہ ایک تاریخ ساز معاہدہ ہے جس میں امریکی کمپنی نے ہندستانی کمپنی کے ساتھ طھیارہ سازی اور دفاعی معاملت میں معادہ کیا ہے اور وہ بھی یہ معاہدہ ایسے وقت کیا گیا ہے جب کہ امریکہ میں حکومت کی جانب سے ’امریکہ فرسٹ‘ کے نعرہ لگائے جا رہے ہیں اور امریکی کمپنی کی جانب سے ہندستانی کمپنی سے معاہدہ کئے جانے کو حکومت ہند اور ’میک ان انڈیا‘ اسکیم کی کامیابی قرار دیا جانے لگا ہے۔ ٹاٹا اڈوانسڈ سسٹم کے عہدیداروں نے بتایا کہ F-16 طیارے ہندستانی سنگل انجن طیاروں کی طرح ہی ہیں۔ ان عہدیداروں نے بتایاکہ طیاروں کے غول اور اوپری حصہ کی تیاری میں ٹاٹا اڈوانسڈ سسٹم کا رول ہوگا جو کہ افواج کی حمل و نقل کے C-130طیاروں کی طرح تیار کئے جائیں گے۔ F-16طیارے فروخت کرنے والی کمپنی کے طیارے ہندستان میں تیار ہونے کی صورت میں ہندستان کو نہ صرف ہوائی شعبہ میں بلکہ دفاعی شعبہ میں بھی زبردست کامیابی حاصل ہوگی اور امریکی کمپنی سے ٹاٹا کے معاہدہ کے بعد سمجھا جا رہاہے کہ دیگر کمپنیاںاور ممالک بھی دفاعی اور ہوائی شعبہ کی معاملتوں کے سلسلہ میں ہندستان کا رخ کریں گے۔ ٹاٹا کی ہیلی کاپٹر سازی کی صنعت حیدرآباد کے نواحی علاقہ میں ہونے کے سبب یہ کہا جا رہا ہے کہ ٹاٹا ایڈوانسڈ سسٹم کی جانب سے F-16کی تیاری بھی شہر حیدرآباد کے قریب ہوگی ایسی صورت میں ریاست تلنگانہ میں نوجوانوں کو ملازمتوں کے مواقع میسر آسکتے ہیں اور حکومت کی بھی یہی کوشش رہے گی کہ اس نئے معاہدہ کے مطابق تیار کئے جانے والے طیارے تلنگانہ میں ہی تیار کئے جائیں۔

TOPPOPULARRECENT