Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / ہندوستان میں در اندازی کیلئے بنگلہ دیش سرحد کا آسانی سے استعمال، گرفتار پاکستانی شہری محمد ناصر کا انکشاف

ہندوستان میں در اندازی کیلئے بنگلہ دیش سرحد کا آسانی سے استعمال، گرفتار پاکستانی شہری محمد ناصر کا انکشاف

حیدرآباد۔ /19 اگست (سیاست نیوز) دھوکہ بازی اور جعلسازی کے ذریعہ پاسپورٹ اور دیگر قومی ستاویزات حاصل کرنے کے الزام میں گرفتار پاکستانی شہری محمد ناصر جسے حالیہ دنوں ٹاسک فورس نے حرکت الجہاد اسلامی اور دیگر دہشت گرد تنظیموں سے تعلق ہونے کے سبب گرفتار کیا تھا نے مبینہ طور پر تفتیش کے دوران سنسنی خیز انکشافات کئے ہیں ۔  پاکستانی شہری کی تفتیش سے سکیورٹی ایجنسیوں کو یہ انکشاف ہوا ہے کہ ہندوستان میں دراندازی کیلئے ہند ۔ بنگلہ دیش  سرحد پر  واقع ’’آئی لیلی‘‘  حکام کا استعمال کیا جارہا ہے ۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ محمد ناصر نے آئی لیلی مقام کے ذریعہ اپنے ارکان خاندان کو بھی ہندوستان منتقل کیا تھا ۔ بتایا جاتا ہے کہ پہاڑی شریف علاقہ میں واقع ایک یونانی دواخانہ میں ملازمت حاصل کرنے سے قبل ناصر ہریانہ کے پانی پت شہر میں آدھار کارڈ ، راشن کارڈ ، پیان کارڈ اور دیگر اہم دستاویزات دھوکہ دہی کے ذریعہ حاصل کئے تھے ۔ تحقیقات کے دوران پولیس کو اس بات کا پتہ چلا ہے کہ وہ عبدالجبار نامی ہوجی دہشت گرد کیلئے ’’کھیپیا‘‘ (انسانوں کی اسمگلنگ) میں ملوث تھا ۔ وہ بنگلہ دیش اور پاکستانی شہریوں کو ایک ملک سے دوسرے ملک بھیجا کرتا تھا ۔ ناصر نے دلسکھ نگر بم دھماکے کیس کے اہم ملزم و پاکستانی شہری ضیاء الرحمن عرف وقاص کو 2014 ء میں آئی لیلی مقام کے ذریعہ  بنگلہ دیش بھیجا تھا ۔ اسپیشل انوسٹی گیشن ٹیم جو اس کیس کی تحقیقات کررہی ہے نے عدالت میں درخواست داخل کرتے ہوئے ناصر اور اس کے پانچ ساتھی بشمول بنگلہ دیشی اور میانمار کے شہری کو 15 دن کی پولیس تحویل میں دینے کی گزارش کی ہے ۔ تحویل میں لینے کے بعد تحقیقاتی ایجنسیاں ناصر کو ہند۔بنگلہ دیش سرحد آئی لیلی مقام لے جائے گی تاکہ دراندازی کے حقائق کا پتہ لگایا جاسکے ۔

TOPPOPULARRECENT