Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / ہندوستان میں ’ہندوپاکستان‘ بنانے کی کوشش نہ کریں، یچوری کا انتباہ

ہندوستان میں ’ہندوپاکستان‘ بنانے کی کوشش نہ کریں، یچوری کا انتباہ

New Delhi: CPI(M) general secretary Sitaram Yechury addressing a press conference at the party headquarters in New Delhi on Wednesday. PTI Photo by Manvender Vashist (PTI6_7_2017_000166B)

’’وزیراعظم مودی نے کہہ دیا کہ فرقہ پرستی ختم ہونا چاہئے، کیسے ختم ہو اس کا کوئی تذکرہ نہیں‘‘
نئی دہلی۔9 اگست (سیاست ڈاٹ کام) فرقہ پرستی کے خطرات کو نمایاں کرتے ہوئے سی پی آئی (ایم) لیڈر سیتارام یچوری نے آج ہندوستان میں سے ’’ہندو پاکستان‘‘ تشکیل دینے کے خلاف متنبع کیا۔ وہ ہندوستان چھوڑدو تحریک کے 75 سال کی یاد منانے کے لیے راجیہ سبھا میں منعقدہ خصوصی مباحث میں حصہ لے رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ جدوجہد آزادی کے دوران قوم کو تکلیف دہ حالات سے گزرنا پڑا اور ملک کی آزادی بھی اس سے جڑی تقسیم کے تکلیف دہ معاملے کے ساتھ آئی۔ یچوری جن کی رکن راجیہ سبھا کی حیثیت سے میعاد جاریہ سیشن کے ساتھ ختم ہورہی ہے، انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی نے تذکرہ کیا ہے کہ فرقہ پرستی کو تو ہندوستان چھوڑنا ہی ہوگا۔ ’’سوال یہ ہے کہ کیا ہم ایسا کچھ کررہے ہیں کہ یہ (فرقہ پرستی) ہندوستان سے ختم ہوجائے؟‘‘ فرقہ وارانہ ہم آہنگی سے متعلق ایک شعر پڑھتے ہوئے یچوری نے کہا کہ ہندوپاکستان کی تشکیل نہیں ہونا چاہئے۔ سی پی ایم لیڈر نے برطانوی راج کے خلاف جدوجہد میں کئی کمیونسٹ قائدین کے رول کو یاد کیا۔ انہوں نے کہا کہ بنگال اور پنجاب کے کمیونسٹ قائدین کی کافی تعداد سلیولر جیل میں تھی تاہم انہوں نے زور دیا کہ جدوجہد آزادی کو کسی کے ساتھ مخصوص کرنے کی کوششیں نہیں ہونا چاہئے۔

یچوری نے کہا کہ دو کمیونسٹ قائدین ایک مولانا اور ایک سوامی رہے جنہوں نے 1921ء میں انڈین نیشنل کانگریس کی ایک میٹنگ میں کامل آزادی کے لیے قرارداد پیش کی تھی۔ ہندوستان چھوڑدو تحریک کا تعلق سارے عوام سے ہے اور یہ مشترک ورثہ ہے۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ امیروں اور غریبوں کے درمیان خلیج بڑھتی جارہی ہے۔ ملک کی جی ڈی پی کی 49 فیصد رقم کبھی ملک کی ایک فیصد آبادی کے قبضے میں ہوا کرتی تھی جو بڑھ کر 54.4 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مضرت رساں فراق دلانہ پالیسیوں اور فرقہ پرستی کو ختم کرنے کی ضرورت ہے۔ یہ مباحث میں حصہ لیتے ہوئے سکھیندو شیکھر رائے (ترنمول کانگریس) نے بھی ملک کی آزادی میں مجاہدین آزادی کے رول کی یاددہانی کرائی تاہم انہوں نے افسوس ظاہر کیا کہ اس وقت بھی بعض غدار تھے جنہوں نے اس وقت ہندوستان چھوڑدو تحریک میں حصہ نہیں لیا تھا۔ اس وقت ایسی پارٹیاں بھی تھیں جنہوں نے انگریزوں کی طرفداری کرتے ہوئے ہندوستان چھوڑدو تحریک کو ناکام بنانے کی کوشش کی اور آج بھی بعض غدار ہیں جو ہمارے بھائی چارے کے لیے خطرہ بن رہے ہیں۔ ترنمول کانگریس لیڈر نے کہا کہ ان کی پارٹی سربراہ اور چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی آج سے بی جے پی بھارت چھوڑو آندولن شروع کررہی ہیں۔ اس مرحلہ پر ڈپٹی چیرمین پی جے کورین نے کہا کہ اس مباحث میں سیاست کو شامل نہ کریں اور یہاں کے تبادلہ خیال کو اعلی ترین سطح پر رکھا جانا چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT