Sunday , September 24 2017
Home / دنیا / ہندوستان کا پاکستان کیخلاف تعزیری کارروائیوں پر غور

ہندوستان کا پاکستان کیخلاف تعزیری کارروائیوں پر غور

واشنگٹن ۔ 26 مئی (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان سفارتی اعتبار سے پاکستان کو یکاوتنہا کردینے کی سمت پیشرفت کررہا ہے کیونکہ وہ سرحد پار دہشت گردی کی تائید کررہا ہے۔ ایک اعلیٰ سطحی دفاعی سراغ رسانی کے سربراہ لیفٹننٹ جنرل ونسنٹ اسیورٹ ڈائرکٹر دفاعی سراغ رسانی محکمہ نے طاقتور امریکی سینٹ کے ارکان کی مسلح خدمات کمیٹی کے اجلاس پر جبکہ امریکی کانگریس عالمگیر خطروں کے بارے میں سماعت کررہی ہے، کہا کہ ہندوستان پاکستان کے خلاف سرحد پار دہشت گردی کی تائید کی بناء پر تعزیری کارروائی کرنے پر غور کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان اپنی فوج کے موقف کو بہتر بنارہا ہے تاکہ حکومت ہند کے بحرہند کے علاقہ میں مفادات کا تحفظ کیا جاسکے اور سفارتی و معاشی رسائی پورے ایشیاء میں حاصل کی جاسکے۔ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان باہمی تعلقات ہندوستان میں کئی دہشت گرد حملوں کے بعد ابتر ہوگئے ہیں۔ لیفٹننٹ جنرل اسٹیورٹ نے کہا کہ ہندوستان اور پاکستان کی افواج کے درمیان 2016ء میں زبردست ترین فائرنگ کا تبادلہ ہوا تھا اور ہر ایک نے بڑھتی ہوئی کشیدگی کے پیش نظر ایک دوسرے سفارتکاروں کو اپنے اپنے ملک سے خارج کردیا تھا۔ دریں اثناء پاکستان کے نیوکلیئر ہتھیاروں کے ذخیرہ میں روز بروز اضافہ ہوتا جارہا ہے جس پر امریکہ کو تشویش ہے۔ پاکستان کے نیوکلیئر ہتھیار تیار کرنے کی وجہ سے صیانتی مسائل پیدا ہورہے ہیں۔ انہوں نے اصولی اعتبار سے بحری قانون کے نفاذ اور فوجی محب وطن افراد میں اضافہ کی سخت ضرورت ہے۔ لیفٹننٹ جنرل اسٹیورٹ کی پیپلز لبریشن آرمی کی حکمت عملی کو بھی ایک علاقائی خطرہ تصور کرتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT