Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / ہندوستان کو مذہبی مملکت بنانے کی کوشش

ہندوستان کو مذہبی مملکت بنانے کی کوشش

دین اور دستور بچاؤ تحریک کا آغاز: پرسنل لا بورڈ
بھوپال ۔17اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) کُل ہند مسلم پرسنل لاء بورڈ نے آج کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی کو متحدہ عرب امارات کی مسجد کا دورہ کرنے سے پہلے ہندوستان کی کسی مسجد کا دورہ کے لئے انتخاب کرناچاہیئے تھا ۔ بورڈ نے الزام عائد کیا کہ دستور کی بنیادی اقدار جیسے سیکولرازم ‘ انصاف ‘ آزادی ‘ مساوات اور اخوت کی قیمت پر سمجھوتے کئے جارہے ہیں ۔ کوششیں جاری ہیں کہ ہندوستان کو سیکولرمملکت سے ایک مخصوص مذہب کی مملکت میں تبدیل کردیا جائے ۔ کسی اور ملک میں مسجد کا دورہ کرنے سے بہتر ہوتا کہ نریندر مودی ہندوستان کی کسی مسجد کا دورہ کرتے ۔ بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا محمد ولی رحمانی نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مودی کے شیخ زاید جامع مسجد ابوظہبی کے دورہ کے بارے میں سوال کا جواب دیتے ہوئے یہ تبصرہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ مرکز میں حکومت کی تبدیلی کے بعد کوششیں جاری ہیں کہ ایک خاص مذہب کو سیکولرازم کی قیمت پر فروغ دیا جائے ۔ انہوں نے کاکہا کہ ملک کے سیکولرتانے بانے کی حفاظت کیلئے دین اور دستور بچاؤ تحریک کا آج آغاز کیا گیا ہے ۔ سچر کمیٹی رپورٹ ثابت کرچکی ہے کہ ہندوستانی مسلمان تعلیمی اور معاشی اعتبار سے سب سے زیادہ پسماندہ ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT