Wednesday , September 20 2017
Home / Top Stories / ہندوستان کو ہمہ گیر خطرات کا سامنا ‘ دفاعی استحکام لازمی ‘ جیٹلی

ہندوستان کو ہمہ گیر خطرات کا سامنا ‘ دفاعی استحکام لازمی ‘ جیٹلی

طویل مسافت پر نشانہ لگانے والے میزائیل کی ہندوستانی بحریہ کو حوالگی ‘ مرکزی وزیر دفاع کا خطاب
حیدرآباد۔27اگسٹ (سیاست نیوز) وزیر دفاع ارون جیٹلی نے آج کہا کہ اپنے جغرافیائی محل وقوع کی وجہ سے اور کئی خطرات میں گھرے رہنے کی وجہ سے ہندوستان کو ہمیشہ اپنے دفاع کیلئے تیار رہنا پڑتا ہے اور یہی ہمارا بہترین دفاع ہے ۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ملک کی مسلح افواج کو درکاری نظام کی فراہمی بھی عمل میں لائی جانی چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ جغرافیائی و سیاسی صورتحال میں ہم ایک ایسے مقام پر ہیں جہاں ہمیں کئی خطرات درپیش ہیں اور ان خطرات کا سامنا کرنے کیلئے ہماری دفاعی تیاریاں ہی ہمارا بہترین دفاع ہے اورا س کا وہ بارہا اظہار کرتے رہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنی دفاعی تیاریوں میں کسی کوتاہی کے متحمل نہیں ہوسکتے ۔ مسٹر جیٹلی نے کہا کہ حالانکہ سارا ملک اپنے مسلح افواج پر پورا بھروسہ کرتا ہے تاہم ہم کو اپنی تیاریوں کے حصے کے طور پر ہماری افواج کو تمام درکار اسلحہ اور مدد فراہم کرنے کی ضرورت ہے ۔ ہندوستان کی افواج دنیا کی بہترین افواج میں شمار ہوتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندستان اپنی دفاعی قوت میں استحکام کیلئے کوشاں ہے اور ہم چاہتے ہیں کہ ملک دفاعی محاذ پر دوسروں سے ہتھیار کی خریدی کے بجائے خود مختار ہوجائے اور دوسرے ہم خیال اور دوست ممالک کو سربراہ کرنے کے اہل ہو جائے۔ مرکزی وزیر دفاع مسٹر ارون جیٹلی نے آج فضاء میں طویل مسافت پر نشانہ لگانے والے میزائیل کی ہندستانی بحریہ کو حوالگی کی تقریب سے خطاب کے دوران یہ بات کہی۔ انہو ںنے بتایاکہ حکومت ہند کی دفاعی پالیسی کافی مستحکم ہے اور اس میں مزید استحکام کی منصوبہ بندی کافی حد تک اطمینان بخش ہے۔ مسٹر ارون جیٹلی نے بتایا کہ ملک کے دفاعی نظام کو مستحکم کرنے کے سلسلہ میں دفاعی کمپنیوںکے اقدامات پر اطمینان ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ہندستان ہر شعبہ میں تیزی سے ترقی کرتا جا رہا ہے اور کئی ممالک اپنے تحقیق و ترقیاتی مراکز ہندستان منتقل کر رہے ہیں کیونکہ انہیں ہندستان میں با صلاحیت افراد کے علاوہ کم لاگت آرہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ہندستان تیزی سے ترقی کرنے والی مملکت بنتا جا رہا ہے اور معاشی اعتبار سے بھی ہندستان کو دنیا کی تیز رفتار ترقی کرنے والی معیشتوں میں شمار کیا جانے لگا ہے۔ وزیر دفاع نے کہا کہ ہندستان کو دنیا کے موجود ہ حالات اور جغرفیائی اعتبار سے ہمیشہ ہی اپنے دفاعی نظام کو مستحکم رکھنا لازمی ہو چکا ہے اور ہندستان اس صورتحال کو بخوبی سمجھتا ہے۔ انہوں نے اس موقع پر منعقدہ تقریب کے دوران ہند۔اسرائیل تحقیق کے ساتھ تیار کردہ طویل مسافت پر فضائی حملہ کرنے والے میزائیل کو ہندستانی بحریہ کے حوالے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہندستانی فضائیہ ‘ بحریہ اور بری افواج کو عصری اسلحہ سے لیس کرنے کے معاملہ میں حکومت ہند کی منصوبہ بندی میں ہندستانی دفاعی اسلحہ کی تیاری کرنے والے اداروں کی کارکردگی کی سراہنا کرتی ہے کیونکہ ہندستانی دفاعی اسلحہ کی تیاری کرنے والے ادارے اپنی صلاحیتوں کے استعمال کے ذریعہ ملک کو دفاعی اعتبار سے طاقتور بنا رہے ہیں۔بھارت ڈائنامک لمیٹیڈ کنچن باغ میں منعقدہ اس پروگرام کے دوران مسٹر ارون جیٹلی نے کہا کہ بی ڈی ایل ہندستان کے میزائیل کا اٹوٹ حصہ ہے اور اس کے بغیر ہندستان کی میزائیل سائنس میں ترقی کا تصور نہیں کیا جا سکتا۔ اس تقریب میں مسٹر وی ادئے بھاسکر صدرنشین و منیجنگ ڈائریکٹر بھارت ڈائنامک لمیٹیڈ ‘ مسٹر اے کے گپتا آئی اے ایس کے علاوہ مدھانی کے علاوہ بحریہ‘ فضائیہ و افواج کے اعلی عہدیداراور اسرائیلی تحقیقی اداروں کے ذمہ دار موجود تھے۔مسٹر ارون جیٹلی نے اس میزائیل کی تیاری پر ادارہ کو مبارکباد پیش کی ۔

TOPPOPULARRECENT