Friday , August 18 2017
Home / Top Stories / ہندوستان کی طاقت ثقافتی تکثیریت میں مضمر

ہندوستان کی طاقت ثقافتی تکثیریت میں مضمر

پرنب مکرجی کا اسرائیلی یونیورسٹی میں خطاب، صدر ہند کو اعزازی ڈگری کی پیشکشی
یروشلم ۔ 15 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان کے منفرد نمونہ تکثیریت سے اسرائیلی قائدین کی دلچسپی کے درمیان صدرجمہوریہ پرنب مکرجی نے آج زور دیا کہ تکثیریت جوڑنے والا عنصر ہے اور ہندوستان کی طاقت اس کی کثرت میں وحدت کے پہلو میں مضمر ہے۔ تکثیریت کثرت کو جوڑنے والا عنصر اور کثرت میں وحدت کو اہم طاقت قرار دیتے ہوئے پرنب مکرجی نے ہیبرو یونیورسٹی میں حاضرین کو خطاب کیا جہاں انہیں اعزازی ڈگری پیش کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان ایسا ملک ہے جو طاقتور تانے بانے سے جڑا ہے۔ قبل ازیں اسرائیل کے ہر سینئر لیڈر بشمول صدر ریوین ریولن، وزیراعظم بنجامن نتن یاہو اور اپوزیشن کے لیڈر ایزاک ہرزوگ نے ہندوستان کی ستائش کی کہ اس نے مختلف نوعیت کے مذاہب والے لوگوں کی آبادی پر مشتمل ملک کی حیثیت سے ترقی کی ہے۔ اسرائیل کی پارلیمنٹ نیسٹ میں ہرزوگ نے اپنی تقریر میں کہا کہ اسرائیل کو ہندوستان سے سیکھنا چاہئے کہ کس طرح وہ کئی اقلیتی گروپوں بالخصوص مسلمانوں میں پرامن بقائے باہم کو برقرار رکھنے میں کامیاب کہا ہے۔ ان اقلیتی گروپوں کی زندگی کے ہر شعبہ میں نمائندگی ہے۔ دیگر اجلاسوں میں پرنب مکرجی نے کہا کہ جیو اور جینے دو کے اصول کو اپنانے کی ضرورت ہے اور تجویز رکھی کہ مباحث، بات چیت کے ذریعہ اختلافات کو دور کرنا چاہئے، حکومت ہند کے ترجمان نے یہ بات بتائی۔ قبل ازیں صدرجمہوریہ پرنب مکرجی کو آج باوقار ہیبرو یونیورسٹی کی جانب سے اعزازی ڈگری عطا کی گئی، جو مغربی ایشیاء کو ان کے 6 روزہ دورہ پر تیسری ڈگری ہے، جس سے پتہ چلتا ہیکہ ہندوستان کے تعلقات اردن، فلسطین اور اسرائیل سے کس قدر گرمجوشانہ ہے۔ پرنب مکرجی جو اسرائیل کا دورہ کرنے والے پہلے ہندوستانی سربراہ مملکت ہیں، انہوں نے اعلیٰ تعلیم، ہندوستانی معیشت کی مضبوطی میں اپنے رول اور طاقتور ہند ۔ اسرائیل روابط کی طویل عرصہ سے وکالت کے تئیں اپنے ثابت قدم عہد کیلئے اعزازی ڈاکٹریٹ حاصل کی۔ اس موقع پر اپنی تقریر میں صدرجمہوریہ نے کہا کہ وہ دوستی کے اس خیرسگالانہ اقدام کی بہت قدر کرتے ہیں اور یہ کہ ہندوستان اسرائیل کے عوام کے ساتھ اپنی دوستی اور شراکت داری کو کافی اہمیت دیتا ہے۔ انہوں نے میک ان انڈیا مہم اور ڈیجیٹل انڈیا پروگرام میں بھی اسرائیل کی شراکت داری پر زور دیا۔

TOPPOPULARRECENT