Saturday , September 23 2017
Home / دنیا / ہندوستان کی مجموعی شرح ترقی کی چینی ستائش

ہندوستان کی مجموعی شرح ترقی کی چینی ستائش

مزید سرمایہ کاری سے دلچسپی کا اظہار ‘ وزیرخارجہ چین وانگ ای کی اخباری نمائندوں سے بات چیت

ماسکو۔24اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) چین نے اپنی متاثرکن شرح ترقی کو عالمی معاشی سست رفتاری کے باوجود برقرار رکھتے ہوئے ’’ اچھا کارنامہ انجام دیا ہے ‘‘ چین ہندوستان میں مزید سرمایہ کاری سے گہری دلچسپی رکھتا ہے ۔ بین الاقوامی مالیاتی نظام اور داخلی کمزوریوں سے گریز کیلئے اصلاحات پر زور دیتا ہے ۔ وزیر خارجہ چین وانگ ای نے کہا کہ ان کا ملک ہندوستان میں مزید سرمایہ کاری کرنے سے گہری دلچسپی رکھتا ہے ۔ دو بڑی ابھرتی ہوئی معیشتیں نمایاں طور پرعالمی معیشت کی مدد کرسکتی ہیں بشرطیکہ اُن کی شرح ترقی کی رفتار برقرار رہے ۔ انہوں نے کہا کہ سب سے پہلے تو دونوں ممالک کو اپنی قومی معیشتیں مستحکم کرنا ہے ‘ اس محاذ پر ہم ہندوستان کے اچھے کارنامہ کی ستائش کرتے ہیں ‘ معاشی ترقی کو فروغ دیا ہے ۔

وزیر خارجہ چین وانگ روس ‘ ہندوستان اور چین پر مشتمل تنظیم کے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں شرکت کیلئے روس کا دورہ کررہے ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ عالمی معاشی نظام ترقی پذیر ممالک کے مفادات کے تحفظ کیلئے اور عالمی معیشت کی بحالی کیلئے کلیدی اہمیت رکھتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں عالمی معیشت اور مالیتی حکمرانی میں بہتری کیلئے مثبت کردار ادا کرنے متحد ہوجانا چاہیئے ۔ اس سے ترقی پذیر ممالک کے مفادات کا تحفظ ہونے کے ساتھ ساتھ عالمی معیشت کو مستحکم بحالی کے راستہ پر ڈالنے میں مدد ملے گی ۔ انہوں نے کہا کہ چین دونوں ممالک کے درمیان گہرے تعلقات کے امکانات کے بارے میں پُراُمید ہے ۔انہوں نے کہا کہ بے شک ہمیں ہندوستان میں زیادہ سرمایہ کاری کر کے خوشی ہوگی ۔ قبل ازیں 30سال تک شرح ترقی دو اعداد پر مشتمل رہنے کے بعد چین میں شرح ترقی کم ہوگئی ہے اور  ہندوستان میں تیز رفتار ترقی پذیر بڑی عالمی معیشت کی حیثیت سے چین کی جگہ لے لی ہے ۔ تاہم چین کی معیشت ہندوستان کی معیشت سے کہیں زیادہ بڑی ہے ۔ اس کے رقبہ کے لحاظ سے تخمینہ کیا جائے تو چینی معیشت ہندوستان سے زیادہ بڑی ہے ۔ 2015ء میں چینی معیشت کی شرح ترقی 6.5فیصد تھی جب کہ ہندوستان کی شرح ترقی کا تخمینہ 7.3فیصد کیا گیا ہے ۔بین الاقوامی مالیتی فنڈ کے تخمینہ کے بموجب ہندوستانی معیشت 2016 اور 2017ء میں بھی 7.5فیصد شرح سے ترقی کرے گی ۔ وزیر خارجہ چین نے کہا کہ وہ صدر جمہوریہ ہند پرنب مکرجی کے آئندہ دورہ چین کے منتظر ہیں۔

TOPPOPULARRECENT