Saturday , August 19 2017
Home / پاکستان / ہندوستان کے میزائیل تجربات پر پاکستان کا اظہارتشویش

ہندوستان کے میزائیل تجربات پر پاکستان کا اظہارتشویش

غیرمملکتی عناصر کو پناہ دینا پاکستان کیلئے مسئلہ بن گیا ہے، فرحت اللہ بابرکا اعتراف
اسلام آباد ۔ 8 جون (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان نے ہندوستان کی جانب سے حال ہی میں تیار کردہ ایک میزائیل شکنی بیلسٹک نظام پر گہری تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ اس سے ہندوستان کو اپنی سیکوریٹی کی ایک غلط احساس فراہم ہوگا جس سے ناقابل قیاس پیچیدگیاں پیدا ہوں گی جو ایک دوستانہ پڑوسی سے متعلق اس کی پالیسی سے متضاد ہے۔ ہندوستان نے 15 مئی کو اڈیشہ کے ساحل سے ایک دیسی ساختہ سوپر سونک انٹرسپٹر میزائیل کا کامیاب تجربہ کیا تھا جو کسی بھی آنے والے (دشمن کے حملہ آور) بیلسٹک میزائیل کو تباہ کرسکتا ہے۔ روزنامہ ایکسپریس ٹریبون نے خبر دی ہیکہ سینٹ کے گذشتہ روز منعقدہ اجلاس میں اس تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ہندوستانی میزائیل تجربہ کی مذمت کی گئی۔ امورخارجہ کے مشیر سرتاج عزیز نے سینٹ میں حکومت کی طرف سے ردعمل کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ ’’ہندوستان کی طرف سے نیوکلیئر اور میزائیل کے فروغ کیلئے جاری پروگرامس بحرہند کے علاقہ میں نیوکلیئر اسلحہ کے پھیلاؤں کا سبب بن رہے ہیں۔ سرتاج عزیز نے کہا کہ’’اینٹی بیلسٹک میزائیل سسٹم کا فروغ ہندوستان کو اپنی سیکوریٹی کا ایک جھوٹا احساس فراہم کرسکتی ہے جس سے ناقابل قیاس اور غیرمتوقع پیچیدگیاں پیدا ہوسکتی ہیں۔ ایسے اقدامات ایک پرامن اور دوستانہ پڑوسی کی پالیسی سے بھی متضاد ہیں، جس کے بارے میں ہمارے وزیراعظم نواز شریف متعدد موقعوں پر توجہ دلا سکتے ہیں‘‘۔ انہوں نے کہاکہ ’’پاکستان کو اس ضمن میں ہونے والی پیشرفت اور تبدیلیوں پر گہری تشویش ہے اور وہ اپنی دفاعی صلاحیتوں میں اضافہ کیلئے تمام ضروری اقدامات کرسکتا ہے‘‘۔ حکمراں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینئر جاوید عباسی نے کہا کہ ’’جنوبی ایشیاء میں فوت نوازی اسی طرح متاثر ہوا ہے جیسا 1998ء میں ہندوستان کے نیوکلیئر تجربہ سے ہوا تھا‘‘۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر فرحت اللہ بابر نے پاکستان کی خارجہ پالیسی میں ناکامی کیلئے سیکوریٹی پالیسیوں میں نقائص کو ذمہ دار قرار دیا۔ فرحت اللہ بابر نے کہا کہ ’’کیا یہ حقیقت نہیں ہے کہ ہم نے اپنے سیکوریٹی ایجنڈہ کو آگے بڑھانے کیلئے غیرمملکتی عناصر کا تحفظ نہیںکیا؟ غیرمملکتی (غیرسرکاری) عناصر کو پناہ دینے سے متعلق ہماری دیرینہ پالیسی اب ہمارے لئے مسائل اور مشکلات پیدا کررہی ہے‘‘۔ سینٹ کے صدرنشین رضا ربانی نے کہاکہ ہندوستانی میزائیل تجربہ سے پیدا شدہ صورتحال کا جواب دینے کیلئے ایک واضح حکمت عملی اختیار کی  جائے۔

TOPPOPULARRECENT