Wednesday , September 20 2017
Home / ہندوستان / ہندوستان کے نیوکلیئر لائیبلٹی لاء پر تشویش برقرار

ہندوستان کے نیوکلیئر لائیبلٹی لاء پر تشویش برقرار

نئی دہلی۔24 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) جیت پور پلانٹ کیلئے 6نیوکلیئر ری ایکٹرس کی سربراہی کیلئے ہندوستان اور فرانس کے درمیان معاہدہ پر دستخط کے ایک ماہ بعد فرانس کی فرم ای ڈی ایف نے کہاکہ ہندوستان کے نیوکلیئر  لائیبلٹی لا پر ہنوز تشویش برقرار ہے ۔ اس معاہدہ کے بعد فرم نے ان یونٹس کیلئے تازہ قیمت کے تعین کی تجویز پیش کرنے کا اعلان کیا ۔ فرانس کی حکومت کے عہدیداروں نے کہا کہ تازہ ٹیکنو کمرشیل تجاویز پیش کی جائیں گی اور اس کے ساتھ ہندوستان کی اعلیٰ فی یونٹ شرح پر تشویش کا جائزہ لیا جائے گا ۔ فرانس کی فرم ای ڈی ایف نے سیول لائیبلٹی نیوکلیئر نقصان قانون 2010 کی شق 17(a) ‘ (b) اور (c) سے متعلق تشویش کا اظہار کیا ہے ۔ فرانس کا احساس ہے کہ شق 46 میں کئی ایک خامیاں ہیں اور اندیشہ ہے کہ اس کی سربراہی میں رکاوٹ پیدا ہوسکتی ہے ۔ ہم نے این پی سی آئی ایل کے ساتھ اور ڈپارٹمنٹ آف اٹامک انرجی سے اس مسئلہ کو اٹھایا ہے ۔
گذشتہ ماہ نیوکلیئر اور کارپوریشن آف انڈیا لمٹیڈ نے قبل ازیں تجویز کردہ دو اس طرح کے ری ایکٹرس کے برعکس 6 یورپی پریزرائزڈ ری ایکٹر بنانے کیلئے ایک معاہدہ پر دستخط کئے تھے ۔ اس پراجکٹ کے آغاز میں تاخیر ہورہی ہے اس پر سب سے پہلے 2008 میں دستخط ہوئی تھی اور ہندوستان کے لائیبلٹی قانون پر تشویش ظاہر کی گئی تھی ۔ سال 2014ء میںامریکہ نے بھی اس طرح کی تشویش ظاہر کرتے ہوئے شق 46 پر کئی سوال اٹھائے تھے اس پر صدر امریکہ بارک اوباما کے دورہ ہندوستان سے قبل ہندوستان نے اس مسئلہ سے نمٹنے کیلئے نیوکلیئر انشورنس پول بناتے ہوئے منصوبوں کا اعلان کیا تھا ۔ گذشتہ سال اپریل میں اس پروگرام کو تیزی سے مکمل کرنے کا بھی ایک اور معاہدہ کیا گیا لیکن فرانس کی حکومت کے عہدیداروں نے کہا کہ لائیبلٹی کا مسئلہ ہنوز برقرار ہے اور اس پراجکٹ کی قیمت اصل رکاوٹ بنی ہوئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT