Thursday , August 24 2017
Home / ہندوستان / ہندو دیوتاؤں کے بارے میں ایس پی لیڈر کے ریمارک پر ہنگامہ

ہندو دیوتاؤں کے بارے میں ایس پی لیڈر کے ریمارک پر ہنگامہ

نئی دہلی ۔ 19 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) سماج وادی پارٹی لیڈر کے ہندو دیوتاؤں کے بارے میں متنازعہ ریمارک پر راجیہ سبھا میں آج ہنگامہ آرائی ہوئی، جس کی وجہ سے ایوان کی کارروائی دو مرتبہ ملتوی کرنی پڑی اور انہوں نے اپنے ریمارک پر معذرت خواہی کرلی۔ سماج وادی پارٹی لیڈر نریش اگروال نے ملک بھر میں اقلیتوں اور دلتوں کے قتل اور مظالم کے واقعات میں اضافہ پر مختصر مدتی بحث میں حصہ لیتے ہوئے یہ تذکرہ کیا تھا۔ حکمراں جماعت کے ارکان نے ہنگامہ آرائی کرتے ہوئے کہا کہ ان کے ریمارک سے اکثریتی عوام کے مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچی اور یہ بھی قتل عام کی طرح ہے۔ وہ ایس پی لیڈر سے معذرت خواہی کیلئے اصرار کررہے تھے۔ دو مرتبہ کارروائی ملتوی ہونے کے بعد جیسے ہی دوبارہ کارروائی شروع ہوئی، نریش اگروال نے کہا کہ ان کا ارادہ کسی کے جذبات کو ٹھیس پہنچانا نہیںتھا اگر ایسا ہوا ہے تو وہ معذرت خواہی کرتے ہیں۔ بعدازاں نائب صدرنشین پی جے کورین نے ان ریمارکس کو ریکارڈ سے حذف کردیا اور میڈیا کو بھی احتیاط برتنے کی ہدایت دی۔

TOPPOPULARRECENT