Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / ہندو سینا اور رام سینا کا سنگھ پریوار سے تعلق نہیں: وی ایچ پی

ہندو سینا اور رام سینا کا سنگھ پریوار سے تعلق نہیں: وی ایچ پی

کوچی۔28 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام)کیرالا ہائوز میں بیف کی سربراہی پر جاری تنازعہ کی مذمت کرتے ہوئے وشوا ہندو پریشد (وی ایچ پی) نے آج کہا کہ سنگھ پریوار تنظیمیں کیرالا گورنمنٹ گیسٹ ہائوز یا ریاست بھر کے ہوٹلوں میں بیف کو مینو کا حصہ بنانے کے خلاف نہیں ہیں۔ دہلی پولیس کے کیرالا ہائوز پر دھاوے کے بعد جاری تنازعہ کے دوسرے دن صدر وی ایچ پی کیرالا یونٹ ایس جے آر کمار نے ہندو سینا اور رام سینا جیسی تنظیموں پر نریندر مودی حکومت کی امیج مسخ کرنے کی کوشش کا الزام عائد کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ تنظیمیں مختلف موضوعات بشمول ان کی کھانے کی عادتوں کے معاملہ میں اپنی مرضی دوسروں پر مسلط کرنے کی کوشش کررہی ہیں۔ جب ان سے حکومت کیرالا کے اس فیصلے کے بارے میں پوچھا گیا کہ وہ بھینس کے گوشت کو مینو میں رکھنے کا فیصلہ کرچکی ہے تو انہوں نے کہا کہ ہم کیرالا ہائوز میں بیف سربراہ کرنے کے مخالف نہیں ہیں۔ ہم نے کیرالا یا ریاستی حکومت کے گیسٹ ہائوزس بشمول نئی دہلی کے کیرالا ہائوز میں بیف سربراہ کرنے پر کوئی تنازعہ کھڑا نہیں کیا۔ کمار نے کہا کہ کیرالا ہائوز بیف تنازعہ ہندو سینا جیسی تنظیموں کی کارستانی ہے اور یہ سنگھ پریوار کا حصہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ سنگھ پریوار تنظیمیں کبھی مودی حکومت کی امیج مسخ کرنے کی کوشش نہیں کرتی۔ وی ایچ پی لیڈر نے اس بات کا اعادہ کیا کہ سنگھ پریوار تنظیموں نے کیرالا کی تمام ہوٹلوں میں بیف سربراہ کرنے کی کبھی مخالفت نہیں کی۔

TOPPOPULARRECENT