Wednesday , August 23 2017
Home / دنیا / ہندو پجاری کا قتل بنگلہ دیش میں 3 ہزار گرفتاریاں

ہندو پجاری کا قتل بنگلہ دیش میں 3 ہزار گرفتاریاں

ڈھاکہ ۔ 11 جون ۔(سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش میں ایک ہندو پجاری کے قتل کیلئے دولت اسلامیہ نے ذمہ داری لی ہے ۔ یاد رہے کہ بنگلہ دیش میں گزشتہ کچھ عرصہ سے سیکولر ارکان کے قتل کا سلسلہ جاری ہے جس نے حکومت کی قلعی کھول دی ہے کیونکہ مسلم اکثریتی ملک میں اب اقلیتیں اور سیکولر کردار کے حامی لوگ خود کو محفوظ تصور نہیں کررہے ہیں ۔ امریکہ کے سائٹ انٹلیجنس گروپ نے بھی توثیق کی ہے کہ بنگلہ دیش میں ایک ایک ہندو پجاری کو قتل کیا گیاہے ۔ گروپ نے عربی زبان میں یہ اطلاع دی ہے ۔ 60 سالہ نتیہ رنجن پانڈے کو اُس وقت ہلاک کیا گیا جب وہ مندر سے ایک کیلومیٹر کے فاصلہ پر اپنی روزانہ کی چہل قدمی کیلئے باہر نکلے تھے ۔ بنگلہ دیش کے علاوہ ہندوستان سے بھی لاکھوں عقیدتمند ٹھاکر انوکول چندرست سنگا مندر پر حاضری دیتے ہیں۔ اس دوران بنگلہ دیش میں اقلیتوں اور سکیولر قلم کاروں پر حملوں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے 3 ہزار سے زائد افراد بشمول 37 دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT