Friday , August 18 2017
Home / Top Stories / ہندی نیوز چیانل این ڈی ٹی وی پر حکومت کی ایک روزہ تحدیدات

ہندی نیوز چیانل این ڈی ٹی وی پر حکومت کی ایک روزہ تحدیدات

جمہوریت کیلئے یوم سیاہ، ایڈیٹرس گلڈ اور اپوزیشن جماعتوں کا شدید ردِ عمل

نئی دہلی۔4 ۔نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندی ٹیلی ویزن چینل این ڈی ٹی وی انڈیا نے اس کی نشریات پر ایک دن کی پابندی لگانے کی اطلاعات و نشریات کی وزارت کے حکم کو حیرت ناک قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ اس کے خلاف اس طرح کی کارروائی غیر معمولی ہے اور وہ اس معاملے میں تمام متبادل پر غور کررہا ہے ۔این ڈ ی ٹی وی انڈیا نے اپنے بیان میں کہا کہ حکومت کے اس فیصلے سے اسے حیرانی ہوئی ہے کیوں کہ پٹھان کوٹ میں فوجی اڈے پر ہوئے دہشت گردانہ حملے کی خبر چینلوں اور اخبارات کی کوریج ایک جیسی ہی تھی۔ درحقیقت NDTV  کی کوریج خاص طور پر متوازن تھی۔اس نے کہا کہ ایمرجنسی کے سیاہ دنوں کے بعد جب پریس کو زنجیروں سے جکڑ دیا گیا تھا ۔ اس کے بعد سے این ڈی ٹی وی پر اس طرح کی کارروائی غیر معمولی ہے اور وہ اس معاملے میں تمام متبادل پر غور کررہا ہے ۔سرکاری ذرائع کے مطابق اطلاعات و نشریات کی وزارت کی طر ف سے تشکیل شدہ بین وزارتی سطح کی کمیٹی نے کہا تھا این ڈی ٹی وی نے جنوری میں پٹھان کوٹ کے فضائی اڈے پر جب دہشت گردانہ حملہ ہوا تھا اس دوران اس نے اسٹریٹیجک لحاظ سے حساس اطلاعات اپنے چینل پر نشر کی تھیں۔

وزارت نے اس کے بعد کیبل ٹی وی نیٹ ورک (ریگولیٹری) کے ضابطوں کے تحت کارروائی کرتے ہوئے 9 نومبر کو رات ایک بجے سے 10نومبر رات ایک بجے تک پورے ملک میں چینل کی نشریات اور دوبارہ نشریات پر ایک دن کی پابندی عائد کرنے کا حکم دیا ہے ۔دریں اثناء ایڈیٹرس گلڈ آف انڈیا نے ہندی چینل این ڈی ٹی وی انڈیا کی نشریات پر ایک دن کی روک لگانے کے بین وزارتی کمیٹی کے فیصلے کی شدید مذمت کرتے ہوئے آج کہا کہ حکومت کے اس فیصلے سے ایمرجنسی کے دنوں کی یاد تازہ ہوگئی اور یہ میڈیا پر سخت سنسرشپ کے مترادف ہے ۔ایڈیٹرس گلڈ نے یہاں ایک بیا ن میں اس فیصلے کو فوراً منسوخ کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ چینل کے نشریات پر ایک دن کی روک لگانے کا فیصلہ میڈیا اور ملک کے عوام کی آزاد ی کی واضح خلاف ورزی ہے ۔ حکومت کے اس قدم سے ایمرجنسی کے دنوں کی یادیں تازہ ہوگئی ہیں اور یہ میڈیا پر سخت سنسر شپ عائد کرنے کے مترادف ہے ۔ گلڈ کے صدرراج چنگپا’ جنرل سکریٹری پرکاش دوبے اور خازن سیما مصطفی کے دستخط سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ چینل کی نشریات پر ایک دن کی پابندی لگانے کے اپنی طرح کے اس فیصلے سے لگتا ہے کہ مرکزی حکومت نے میڈیا کے کام کاج میں مداخلت کرنے کا حق خود حاصل کرلیا ہے ا

ور وہ اپنی مرضی کے مطابق کوریج نہیں ہونے پر من مانے ڈھنگ سے تادیبی کارروائی کررہی ہے ۔سرکاری ذرائع کے مطابق اطلاعات و نشریات کی وزارت کی طر ف سے تشکیل شدہ بین وزارتی سطح کی کمیٹی نے کہا تھا این ڈی ٹی وی نے جنوری میں پٹھان کوٹ کے فضائی اڈے پر جب دہشت گردانہ حملہ ہوا تھا اس دوران اس نے اسٹریٹیجک لحاظ سے حساس اطلاعات اپنے چینل پر نشر کی تھیں۔ وارت نے اس کے بعد کیبل ٹی وی نیٹ ورک (ریگولیٹری) کے ضابطوں کے تحت کارروائی کرتے ہوئے نو نومر کو رات ایک بجے سے دس نومبر رات ایک بجے تک پورے ملک میں چینل کی نشریات اور دوبارہ نشریات پر ایک دن کی پابندی عائد کرنے کا حکم دیا ہے ۔عام آدمی پارٹی لیڈر سنجے سنگھ اور چیف منسٹر دہلی ارویند کجریوال ، سی بی آئی کے رکن راجیہ سبھا ڈی راجہ نائب صدر کانگریس راہول گاندھی، چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی، جموں و کشمیر کے سابق چیف منسٹر عمر عبداللہ، کانگریس لیڈر ڈگ وجئے سنگھ نے ہندی نیوز چیانل NDTV پر حکومت کی ایک روزہ تحدیدات کی مذمت کی اور اظہار خیال کی آزادی کی موت کو جمہوریت کی موت سے تعبیر کیا اور 9نومبر کو جمہوریت کیلئے سیاہ یوم قرار دیا۔

TOPPOPULARRECENT