Friday , September 22 2017
Home / کھیل کی خبریں / ہند ۔ لنکاآج دوسرا ونڈے‘مہمان ایک اور کامیابی کے لئے کوشاں

ہند ۔ لنکاآج دوسرا ونڈے‘مہمان ایک اور کامیابی کے لئے کوشاں

مڈل آرڈرمیں راہول اور دھونی پر توجہ‘میچ کا 2:30 بجے آغاز

پالی کیلے۔23 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) سری لنکا کے خلاف پہلے ونڈے میں ملی شاندار کامیابی سے پرجوش ہندوستانی ٹیم یہاں کل کھیلے جانے دوسرے ونڈے میں بھی اپنی شاندار کارکردگی کو برقرار رکھنے کے مقصد سے اترے گی۔ویراٹ کوہلی کی قیادت میں ہندوستانی ٹیم نے دمبولا میں کھیلے گئے پہلے ونڈ ے میں تقریباً یک طرفہ انداز میں سری لنکائی ٹیم کو9 وکٹس سے شکست دی تھی ۔دوسری طرف سری لنکائی ٹیم ٹسٹ سیریز میں 3-0 سے وائٹ واش کا سامنا کرنے کے بعد ونڈے میں بھی ناکام شروعات کی وجہ سے دباو میں ہے جبکہ ورلڈ کپ میں راست رسائی کے لئے اسے سریز میں کم سے کم دو فتوحات حاصل کرنا ضروری ہے ۔ اپل تھرنگا کی کپتانی میں میزبان ٹیم نے پچھلے میچ میں بیٹنگ اوربولنگ دونوں ہی شعبوں میں کافی مایوس کیا تھا۔اس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ہندوستان نے صرف ایک وکٹ کے نقصان پر217 رنز کا آسان ہدف 28.5 اوور میں ہی حاصل کرلیا جو اس کی گیندوں کے لحاظ سے سب سے بڑی کامیابی بھی ہے ۔ ونڈے میں نوجوان کھلاڑیوں اور خاص طور پر بولروں نے ان کے تجربہ کار کھلاڑی رویندر جڈیجہ ، روی چندر اشون ، محمد سمیع کی کمی محسوس نہیں ہونے دی۔ونڈے مین شامل کئے گئے جسپریت بمرا، یجوندر چہل ، اسپنر کیدار جادھو اور نوجوان اکشرٹپیل نے دمبولا میں بہترین بولنگ سے میزبان ٹیم کو43 اوور میں 216 پر ہی روک دیا تھا۔ اکشر نے 10 اوور میں صرف 34 رن دے کر سب سے زیادہ تین وکٹ لئے ۔باقی بولرس نے بھی فی کس دو وکٹ لئے اور کامیاب رہے ۔دوسری طرف سری لنکا کی ٹیم کے بولرس ہندوستان کا وکٹ حاصل نہیں کرسکے اور صرف روہت شرما چار رن پر رن آوٹ ہوکر پویلین لوٹے ۔ اس میچ میں سری لنکا کے تجربہ کارفاسٹ بولر لستھ ملنگا آٹھ اوور میں52 رنز دیے تو لکشن سداکن نے چھ اوور میں63 رنز لٹائے ۔ہندوستان اور سری لنکا کی ٹیم میں بولنگ اور بیٹنگ کے لحاظ سے بھی زمین آسمان کا فرق ہے ۔اس میچ میں مین آف دی میچ رہے شکھر دھون اس وقت ہندوستان کے لئے طاقت بنے ہوئے ہیں جو اس دورے میں اب تک تین سنچری بناچکے ہیں۔ ان کے علاوہ کپتان کوہلی بھی کامیاب ہیں۔پہلے میچ میں دھون نے ناٹ آوٹ 132 رنز کی سنچری اننگز کھیلی تھی تو کوہلی نے ناٹ آوٹ82 رنز سے ٹیم کو یک طرفہ انداز میں کامیابی دلائی تھی۔ کوہلی بھی اپنی شاندار فارم میں ہیں ۔ روہت، لوکیش راہول اور مڈل آرڈر میں مہندر سنگھ دھونی اور آل راونڈر ہردک پانڈیا بھی اہم کھلاڑی ہیں۔حالانکہ پچھلے میچ میں کوہلی اور دھون نے اپنے دم پر ہی ٹیم کو ہدف تک پہنچا دیا جس سے دھونی کو اپنی صلاحیت دکھانے کا موقع ہی نہیں ملا۔ ونڈے سیریز سے پہلے ہی چیف سلیکٹر ایم ایس کے پرساد نے یہ کہہ کر بحث چھیڑ دی تھی کہ دھونی کو بھی اپنی فارم کو ثابت کرنا ہوگا لہذا امید کی جاسکتی ہے کہ دھونی کو اپنی صلاحیت دکھانے کا موقع مل جائے ۔36 سالہ دھونی نے سری لنکا سے پہلے ویسٹ انڈیز دورہ میں تسلی بخش کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا جبکہ چیمپئن ٹرافی میں بھی انہوں نے سری لنکا کے خلاف نصف سنچری بنائی تھی۔ مڈل آرڈر میں کوہلی کے پسندیدہ آل راونڈر ہاردک بھی بہترین کھلاڑی ہیںاور یوراج کے مقام پر شامل کردہ منیش پانڈے بھی توجہ کا مرکز ہیں۔

TOPPOPULARRECENT