Wednesday , August 23 2017
Home / جرائم و حادثات / ہنگامی صورتحال میں 112 ڈائیل کرنے پر مدد

ہنگامی صورتحال میں 112 ڈائیل کرنے پر مدد

نیشنل ایمرجنسی ریسپانس ٹیم کی ملک گیر سطح پر منفرد خدمات
حیدرآباد 23 ڈسمبر (سیاست نیوز) ہنگامی صورتحال میں مدد کے حصول کے لئے اب شہریان تلنگانہ کو پولیس، ایمبولنس، فائر کے لئے علیحدہ نمبر ڈائیل کرنے نہیں پڑیں گے۔ کسی بھی طرح کی ہنگامی صورتحال کے لئے 112 ڈائیل کرتے ہوئے مدد حاصل کی جاسکتی ہے۔ ہراسانی، آتشزنی، ناسازی صحت اور دیگر ہنگامی صورتحال کے دوران شہریان راست اِس نمبر پر فون کرتے ہوئے مدد حاصل کرسکیں گے۔ یونائیٹیڈ اسٹیٹس آف امریکہ نے اس طرح 911 پر تمام خدمات یکجا کی ہیں، اُسی طرح اب ریاست تلنگانہ میں بھی 112 ڈائیل کرتے ہوئے خدمات حاصل کی جاسکتی ہیں۔ مرکزی وزارت داخلہ نے قومی سطح پر نیشنل ایمرجنسی ریسپانس ٹیم کے آغاز کا فیصلہ کیا ہے اور اس مقصد کے تحت گجرات، گوا کے ساتھ ریاست تلنگانہ کا بھی انتخاب عمل میں لایا گیا ہے تاکہ مرکزی حکومت کی جانب سے شروع کی جانے والی یہ خدمات کا تجربہ کیا جاسکے۔ مستقبل قریب میں ایک ہی ہنگامی خدمات کے نمبر کے ذریعہ تمام خدمات کے حصول کی منصوبہ بندی کی جارہی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ 112 ڈائیل کرنے والے ضرورت مند کو فوری طور پر خدمات کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے ایسے آلات نصب کئے جارہے ہیں جس سے فون کرنے والے کے مقام کی تفصیلات حاصل ہوجائے اور جلد از جلد قریبی مرکز سے ٹیم روانہ کرتے ہوئے حالات پر قابو پایا جاسکے۔ نیشنل ایمرجنسی ریسپانس سسٹم کے لئے مرکز کی جانب سے ریاستی سطح کی علیحدہ کمیٹیاں تشکیل دی جاچکی ہیں اور ضلع واری اساس پر بھی اس سلسلہ میں کمیٹیوں کی تشکیل عمل میں لائی جارہی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ مرکزی حکومت کی جانب سے شروع کردہ اس منصوبے کے تحت ریاست تلنگانہ میں ہنگامی خدمات کے لئے اب تک استعمال ہونے والے نمبرات 100 ، 102 ، 108 کو بھی اِسی میں ضم کرنے کا فیصلہ کیا ہے یا پھر ابتدائی دور میں 112 سے اِن خدمات کو مربوط کرنے کے متعلق منصوبہ بندی کی جارہی ہے۔ ذرائع کے بموجب اِن خدمات کے آغاز کا مقصد کسی بھی طرح کی ہنگامی صورتحال میں تمام ہنگامی حالات سے نمٹنے والے محکمہ جات کو متحرک کرنے کے علاوہ ہنگامی حالت میں مدد طلب کرنے والوں کو بروقت مدد کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے۔ ریاست میں 112 خدمات کے آغاز کے متعلق تاحال کوئی قطعی تاریخ مقرر نہیں کی گئی ہے لیکن بہت جلد توقع ہے کہ ریاستی حکومت اس منصوبہ کو عوام کے سامنے پیش کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ اس خصوص میں مرکز کی جانب سے بجٹ اور آلات کی منظوری عمل میں لائی جاچکی ہے۔ آلات کی تنصیب و دیگر اُمور کی تکمیل کے بعد اِن خدمات کا آغاز یقینی بنایا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT