Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ہوٹل میں مضرت رساں بریانی کی افواہ

ہوٹل میں مضرت رساں بریانی کی افواہ

سوشیل میڈیا پر وائرل ، فوڈانسپکٹرس کا معائنہ اور نوٹس
حیدرآباد 13 ڈسمبر (سیاست نیوز) شہر کی ایک معروف ہوٹل میں انتہائی مضرت رساں بریانی سربراہ کئے جانے کی افواہ سوشیل میڈیا پر تیزی سے پھیل گئی جس سے عوام میں کافی کھلبلی مچ گئی تھی۔ اس ہوٹل کی سید علی چبوترہ اور گچی باؤلی میں برانچس واقع ہیں۔ واٹس اپ پر یہ افواہ وائرل ہوگئی کہ اِس ہوٹل میں سربراہ کی جانے والی بریانی کیلئے کُتّے کا گوشت استعمال کیا جارہا ہے۔ یہاں تک کہ بعض ویڈیوز ایسے دکھائے گئے جس میں بتایا گیا کہ کُتّے کو کاٹا جارہا ہے  اور اُس کے گوشت کے ٹکڑے کئے جارہے ہیں۔ بیرونی ممالک میں موجود ہندوستانی تارکین وطن میں بھی اِس وائرل ویڈیو سے تشویش پیدا ہوگئی تھی۔ تلگو میڈیا نے بغیر کسی تصدیق کے اِس افواہ کو نشر کرنے سے اُلجھن اور بڑھ گئی۔ بعدازاں جی ایچ ایم سی کے ویٹرنری اسٹاف، فوڈ انسپکٹرس نے گچی باؤلی میں واقع اِس ہوٹل کا معائنہ کیا اور بریانی کے نمونے حاصل کرلئے۔ جی ایچ ایم سی نے ایک نوٹس جاری کرتے ہوئے ہوٹل مالک کو پابند کیا کہ وہ بلدیہ کے مسلمہ مسلخ سے ہی گوشت خریدیں تاکہ عوام کی صحت متاثر نہ ہو۔ ہوٹل انتظامیہ نے اِن افواہوں کو یکسر مسترد کردیا اور کہاکہ انتہائی بے بنیاد اطلاعات پھیلائی گئی ہیں اور یہ ہمارے تجارتی حریفوں کی کارستانی ہے۔ انتظامیہ نے ہوٹل مالک کو گرفتار کئے جانے کی بھی تردید کی اور رائے درگم پولیس اسٹیشن میں افواہ پھیلانے والوں کے خلاف شکایت درج کرائی۔ کمشنر پولیس سائبرآباد مسٹر سندیپ شنڈالیا نے افواہوں کو سوشیل میڈیا پر شدت سے گشت کرانے کے خلاف انتباہ دیا اور ہوٹل انتظامیہ کی جانب سے رائے درگم پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروانے کی تصدیق کی ہے۔ اس دوران ہوٹل اسوسی ایشن کے وفد نے بھی پہونچ کر واضح کیا کہ اِس اطلاع میں کوئی سچائی نہیں ہے۔ وفد نے ہوٹل انتظامیہ کے موقف کی تائیدکی۔

TOPPOPULARRECENT