Tuesday , March 28 2017
Home / ہندوستان / ہیلی کاپٹر معاملہ میں برطانوی شہری کو تازہ سمن

ہیلی کاپٹر معاملہ میں برطانوی شہری کو تازہ سمن

225 کروڑ روپئے رشوت کی ادائیگی کا الزام
نئی دہلی 7 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) خصوصی عدالت نے آج 3,600 کروڑ کے وی وی آئی پی چاپر (ہیلی کاپٹر) معاملت سے متعلق منی لانڈرنگ کیس میں 3 ملزمین کے خلاف تازہ سمن جاری کیا ہے جبکہ قبل ازیں ایک برطانوی شہری اور درمیانی آدمی کرسچن مائیکل جیمس کے خلاف جاری کردہ غیر ضمانتی وارنٹ کی میعاد ختم ہوگئی ہے۔ خصوصی جج اروند کمار نے ہندوستان میں واقع فرم میڈیا اکزم پرائیوٹ لمیٹیڈ اور اس کے ڈائل کراس آر کے نندا اور جے بی سبرامنیم کے خلاف ازسرنو سمن جاری کرتے ہوئے انھیں 22 فروری کو عدالت میں حاضری کی ہدایت دی ہے۔ جبکہ یہ فرم جیمس، نندا اور سبرامنیم نے قائم کی ہے۔ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ کے وکیل این کے مٹّا (Matta) نے عدالت کو مطلع کیاکہ 3 ملزمین کے خلاف مجریہ وارنٹ کی تعمیل نہیں کروائی جاسکی جس کے بعد عدالت نے ازسرنو سمن جاری کیا ہے۔ گزشتہ سال جون میں انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ نے خصوصی عدالت میں منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات کے بعد 1,300 صفحات پر مشتمل شکایت استغاثہ (چارج شیٹ کے مماثل) پیش کی تھی۔ تحقیقات میں پتہ چلا ہے کہ برطانوی دلال جیمس نے اگسٹا ویسٹ لینڈ سے 30 ملین یورو (225 کروڑ) بطور رشوت حاصل کی تھی تاکہ ہندوستان کو 12 ہیلی کاپٹر فروخت کرنے کا معاملہ طے کیا جاسکے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT