Sunday , August 20 2017
Home / عرب دنیا / یمن میں حوثی ملیشیا پسپا

یمن میں حوثی ملیشیا پسپا

صنعاء ۔ 7 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) یمنی صدر منصور ہادی کی وفادار فورسز نے ملک کے شمال مغرب میں بحراحمر کے کنارے واقع ایک اہم بندرگاہ پر دوبارہ قبضہ کر لیا ہے اور ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں کو وہاں سے شدید لڑائی کے بعد پسپا کر دیا ہے۔ یمنی فوج کے پانچویں ریجن کے کمانڈر جنرل عادل القمیری نے ایک بیان میں بتایا کہ ہمارا میدی شہر اور بندرگاہ پر مکمل کنٹرول ہوچکا ہے۔اس علاقے میں دسمبر کے وسط سے یمنی فورسز اور حوثی باغیوں کے درمیان جھڑپیں ہورہی ہیں۔یمنی فورسز کو پڑوسی ملک سعودی عرب میں تربیت دینے کے بعد اس علاقے میں بھیجا گیا تھا اور انھوں نے سرحدی قصبہ حرض پر قبضہ کر لیا تھا۔ حوثی باغی مبینہ طور پر میدی کی بندرگاہ کو اسلحہ اور گولہ بارود کو شمالی صوبے صعدہ میں اپنے مضبوط مرکز میں پہنچانے کے لیے استعمال کررہے تھے۔ میدی میں شکست کے باوجود حوثی باغیوں اور ان کے اتحادی سابق صدر علی عبداللہ صالح کے وفادار فوجیوں کا ایک لمبی ساحلی پٹی پر کنٹرول برقرار ہے۔ یمنی فورسز کو سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد کی فضائی مدد بھی حاصل ہے۔

TOPPOPULARRECENT